لاہور(نامہ نگارخصوصی،مانیٹرنگ ڈیسک)لاہور ہائیکورٹ کے جسٹس سردارسرفراز احمد ڈوگراورجسٹس اسجد جاوید گھرال پر مشتمل ڈویژن بنچ نے سابق ڈی جی ایل ڈی اے احد خان چیمہ کی آمدنی سے زائد اثاثہ جات کیس میں ضمانت بعدازگرفتاری کی درخواست 10،10لاکھ روپے کے ضمانتی مچلکوں کے عوض منظورکرکے انہیں رہا کرنے کا حکم دے دیا ۔سماعت شروع ہوئی تواحد چیمہ کے وکیل نے موقف اختیارکیا کہ میرے موکل تین سال سے جیل میں بند ہیں، ریفرنس میں 210 گواہان ہیں جن میں سے 63 کے بیانات قلمبند کئے جاچکے ،احدچیمہ کے 9 رشتے داروں کو بے نامی دار بنایا گیا جنہیں ابھی نوٹس جاری نہیں ہوئے ، اگر بے نامی داروں نے اپنی جائیدادوں کے ثبوت فراہم کر دیئے تو تین سال قید کا ذمہ دار کون ہو گا، عدالت مسلسل تاخیر پر ضمانت منظور کر کے رہا کرنے کا حکم دے ۔نیب پراسیکیوٹر نے کہا جواب جمع کروانے کے لئے چند روز دیئے جائیں، ٹرائل کورٹ کی رپورٹ آنے دیں ،معلوم ہو جائے گا کیس میں سب سے زیادہ التوا کس کی طرف سے مانگا گیاہے ، احتساب عدالت کے جج کے تبادلے کی وجہ سے ٹرائل عارضی طور پر رک گیا۔