اسلام آباد؍پشاور(سپیشل رپورٹر؍ این این آئی؍ مانیٹرنگ ڈیسک)وزیراعظم عمران خان نے ایک ٹویٹ میں کہا ہے کہ ہمیشہ شفاف اور آزادانہ الیکشن کیلئے جدوجہد کی، اگرچہ کوئی قانونی مجبوری نہیں مگر تحریک انصاف کے امیدوار سے درخواست کرتا ہوں کہ وہ این اے 75 ڈسکہ کے ان 20 پولنگ سٹیشنز پر دوبارہ پولنگ کیلئے مان جائیں جن پر اپوزیشن چیخ و پکار کر رہی ہے ۔انہوں نے کہا ہم شفافیت اور سینٹ الیکشن میں اوپن بیلٹنگ چاہتے ہیں۔علاوہ ازیں وزیر اعظم سے پشاور میں خیبر پختونخوا کابینہ کے ارکان اور پی ٹی آئی کے ارکان صوبائی اسمبلی نے ملاقات کی۔ملاقات کے دوران وزیر اعظم نے کہا کہ سیاست کا اصل مقصد عوام کی خدمت ہے لیکن بدقسمتی سے یہاں لوگوں نے سیاست کو صرف پیسہ بنانے کے لئے استعمال کیا۔انہوں نے کہا ان لوگوں نے ہر جگہ پیسہ استعمال کیا اور اب ان کی حالت نشان عبرت ہے ۔انہوں نے کہا اخلاقیات جب ختم ہو جائے تو قوم تباہی کی طرف جاتی ہے ، ہم مستقبل اور اپنی نسلوں کی بہتری کا سوچتے ہیں۔عمران خان نے کہا کہ قدرت نے پاکستان کو ہر نعمت سے نوازا ہے ، ہم اس لئے پیچھے رہ گئے کیونکہ یہاں اقتدار عوامی خدمت کے بجائے پیسہ چوری کرنے کے لئے سنبھالا گیا، تاہم ہم ہر نظام میں شفافیت چاہتے ہیں۔خیبر پختونخوا کے گورنر شاہ فرمان اور وزیر اعلیٰ محمود خان نے بھی وزیر اعظم سے ملاقات کی اور ترقیاتی منصوبوں ، سیاسی امور پر تفصیل سے آگاہ کیا۔دریں اثنا وزیراعظم کے زیرصدارت سینٹ الیکشن سے متعلق اجلاس ہوا جس میں گورنرشاہ فرمان، وزیراعلیٰ محمودخان و دیگر رہنماؤں نے شرکت کی۔اجلاس میں نوشہرہ ضمنی الیکشن کابھی تذکرہ ہوا تو وزیردفاع پرویزخٹک نے ضمنی الیکشن ہارنے کی وجوہات بتائیں۔ پرویزخٹک نے کہا الیکشن میں بے قاعدگی کوعدالت میں چیلنج کریں گے ۔اس موقع پر وزیراعظم نے کہا کہ ہماری خواہش ہے سینٹ الیکشن اوپن بیلٹ پرہوں، فیصلہ عدالت کرے گی، عدالت کافیصلہ جوبھی ہوقبول کریں گے ۔ انہوں نے کہا پارٹی جس امیدوارکونامزدکریگی، اسے کامیاب کریں۔قبل ازیں وزیراعظم سے سپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر اور وفاقی وزیر برائے منصوبہ بندی اسد عمر نے علیحدہ علیحدہ ملاقات کی۔وزیر اعظم آفس کے میڈیا ڈیپارٹمنٹ کے مطابق سپیکر اسد قیصرسے ملاقات میں قومی اسمبلی میں جاری پارلیمانی امور پر بات چیت کی گئی۔وزیر اعظم نے کہا تحریک انصاف کی حکومت پارلیمنٹ کو مضبوط بنانے پر پختہ یقین رکھتی ہے ۔اسد عمر نے وزیراعظم سے ملاقات میں صوبہ سندھ میں وفاق کی جانب سے جاری ترقیاتی منصوبوں میں پیش رفت پر بریفنگ دی۔وزیراعظم نے مشیر پارلیمانی امور بابر اعوان کے ساتھ ٹیلی فونک گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ سینٹ انتخابات ہائی جیک کرنے والے جمہوریت پردھبہ ہیں، اوپن ووٹنگ سینٹ الیکشن میں ہارس ٹریڈنگ روکنے کا واحد راستہ ہے ۔وزیراعظم نے سندھ اسمبلی میں اپوزیشن لیڈرحلیم عادل شیخ کی گرفتاری پر بھی بات چیت کی۔ وزیراعظم