لندن (نیٹ نیوز) برطانیہ کی کاؤنٹی کیمبرج میں بھارتی نژاد برطانوی طالبعلم کو باحجاب مسلم خاتون کا دفاع کرنے پر نسل پرستوں کی جانب سے بدسلوکی کا سامنا کرنا پڑ گیا۔ٹائمز آف انڈیا کی رپورٹ کے مطابق ریکیش ایڈوانی کیمبرج ہسپتال میں موجودد تھے کہ اچانک ایک نسل پرست شخص نے باحجاب مسلم لڑکی پر نازیبا الفاظ کی بوچھاڑ کر دی، جس پر ریکیش نے خاتون کا دفاع کیا تو برطانوی نسل پرستوں نے اس پر حملہ کر دیا اور بریگزٹ اور اپنے گھر واپس جاؤ کے نعرے بھی لگائے ۔ریکیش نے پولیس میں رپورٹ درج کراتے ہوئے بتایا کہ مجھے نفرت کا نشانہ بنایا گیا، ہسپتال میں صرف انہوں نے باحجاب خاتون کیخلاف نازیبا الفاظ کا دفاع کیا اور دکھ ہے کہ وہاں موجود کسی بھی شخص نے مسلم خاتون کیلئے آواز نہیں اٹھائی۔پولیس ترجمان کے مطابق معاملے کی تحقیقات جاری ہیں اور اب تک کوئی گرفتاری عمل میں نہیں آئی۔