کراچی (رپورٹ: عمران شیخ) رمضان المبارک سے قبل ریلیز ہونے والی لالی ووڈ فلم ’’شناخت‘‘ اپنی شناخت بنانے میں ناکام ہوگئی۔ فلم کو ریلیز کے لئے صرف چند سینماگھر ملے ،وہاں بھی فلم شائقین کو متاثر کرنے میں ناکام نظر آئی، انڈسٹری کی شخصیات نے فلم سے کافی امیدیں وابستہ کی ہوئی تھیں، فلم کے ہدایتکار زبیر شوکت اور پروڈیوسر فواد علی تھے ، فلم میں خواجہ سراؤں کے مسائل کو اجاگر کرنے کی کوشش کی گئی تھی ،مرکزی کردار معروف اداکار نئیر اعجاز نے نبھایا تھا، دیگر کاسٹ میں وسیم اکرم، ظفر عباس کھچی، رشید علی، فیض چوہان، عاصم صدیقی ودیگر شامل تھے ۔واضح رہے کہ رواں ماہ مئی میں کوئی بھی پاکستانی فلم ریلیز نہیں کی جارہی، جون کے نصف ماہ جو کہ عیدالفطر ہوگا چار اردو، چار پشتو اور ایک پنجابی فلم ریلیز کئے جانے کی اطلاعات ہیں ۔ ماہ جنوری سے ماہ مئی تک ہدایتکار اظفر جعفری کی فلم ’’پرچی‘‘عزیر ظہیر خان کی فلم ’’اﷲ یار دی لیجنڈآف مارخور‘‘، عابس رضا کی فلم’’مان جاؤ نا‘‘، سید عاطف علی کی فلم’’پری‘‘، ریحان شیخ کی فلم ’’آزاد‘‘، عمر عثمان کی فلم ’’ٹک ٹاک‘‘عاصم عباسی کی فلم’’کیک‘‘ اور ہدایتکار عدنان سرور کی فلم ’’موٹر سائیکل گرل‘‘ریلیز کی جاچکی ہیں جبکہ ہدایتکار سہیل خان کی فلم’’شورشرابہ‘‘ کو عین ریلیز والے دن سینماگھر نہ ملنے کی وجہ سے نمائش ملتوی کرنا پڑا تھا ۔ فلم انڈسٹری کے حوالے سے یہ بھی اطلاعات ہیں کہ پانچ ماہ میں ریلیز کی جانی والی فلموں نے کوئی خاطر خواہ باکس آفس پر اپنا رنگ نہیں جمایا ، دوسری طرف بھارتی فلموں نے پاکستانی سینمائگھروں کے شائقین کو اپنے سحر میں جکڑ رکھا ہے ۔