کراچی (کامرس رپورٹر)پاکستان اسٹاک ایکس چینج میں دروز ہ مندی کے بعد بدھ کو ریکوری آئی اور سرمایہ کاروں کی جانب سے نچلی سطح پر آئی قیمتوں پر حصص کی خریداری کے رجحان سے کے ایس ای100انڈیکس۔60 278پوائنٹس کمی سے 43507.50پوائنٹس کی سطح پرپہنچ گیا جب کہ تیزی کے نتیجے میں59.33فیصد حصص کی قیمتوں میں اضافہ ہوا جس سے مارکیٹ کی سرمایہ کاری مالیت میں33ارب91کروڑ 89لاکھ روپے سے زائد کا اضافہ ہوا البتہ حصص کی لین دین کے لحاظ سے کاروباری حجم صرف 11کروڑ18لاکھ97ہزار حصص تک محدود رہا۔گزشتہ روزحکومتی مالیاتی اداروں ، مقامی بروکریج ہائوسزسمیت دیگرانسٹی ٹیوشنزکی جانب سے بینکنگ،سیمنٹ،توانائی، فوڈز، کیمکل اورٹیلی کام سیکٹر میں خریداری کے باعث کاروبار کا آغاز مثبت زون میں ہوا تاہم بعد ازاں الیکشن کے تناظر میں ملکی سیاسی صورتحال کی غیر واضح صورتحال اور ملک کو درپیش معاشی چیلنجز کے درپیش سرمایہ کار محتاط نظر آئے جس کے نتیجے میں اتار چڑھاؤ کا سلسلہ شروع ہوا جس میں ٹریڈنگ کے دوران ایک موقع پر کے ایس ای100انڈیکس 43217پوائنٹس کی نچلی اور43589.72پوائنٹس کی بلند سطح پر بھی دیکھا گیا تاہم ٹریڈنگ کے آخری اوقات میں تیزی کا رجحان غالب آگیا اورمارکیٹ کے اختتام پر ۔60 278پوائنٹس کمی سے 43507.50پوائنٹس پر بند ہوا۔اسی طرح کے ایس ای 30انڈیکس 165.09پوائنٹس کے اضافے سے 21459.63 پوائنٹس اور کے ایس ای آل شیئرز انڈیکس 139.46پوائنٹس کے اضافے سے 31553.10 پوائنٹس پر بند ہوا ۔گزشتہ روزمجموعی طور پر332کمپنیوں کے حصص کاکاروبار ہوا، جن میں سے 197کمپنیوں کے حصص کے بھائو میں اضافہ113کمپنیوں کے حصص کے بھائو میں کمی جبکہ22کمپنیوں کے حصص کے بھائو میں استحکام رہا۔بیشتر کمپنیوں کے حصص کی قیمتیں بڑھنے سے مارکیٹ کی سرمایہ کاری مالیت میں33ارب 91کروڑ 89لاکھ روپے کا اضافہ ہواجس سے سرمایہ کاری کی مجموعی مالیت بڑھ کر89کھرب 38ارب61کروڑ69لاکھ روپے ہوگئی۔ عید الفطر تعطیلات کے پیش نظر حصص کی لین دین بھی محدود رہی اور صرف 11کروڑ18لاکھ 97ہزار 760شیئرز کا کاروبار ہوا جب کہ اس کے مقابلے میں منگل کو 13کروڑ77لاکھ87ہزار990شیئرزکا کاروبار ہوا تھا ۔سٹاک ماہرین کے مطابق آئندہ دنوں بھی اسٹاک مارکیٹ مارکیٹ میں محدود پیمانے پر اتار چڑھاؤ کا سلسلہ برقرار رہنے کا امکان ہے ۔