نئی دہلی (نیٹ نیوز) دلی کے وزیراعلیٰ اور عام آدمی پارٹی کے سربراہ اروند کیجریوال نے گزشتہ تین روزسے دلی کے لیفٹیننٹ گورنر ایل بیجل کی سرکاری رہائش گاہ پر ڈیرے ڈالے ہوئے ہیں تاکہ ان پر دباؤ ڈالا جائے کہ وہ سرکاری افسران کی جزوی ہڑتال کو غیر قانونی قرار دیں اور ان کی کام پر واپسی کو یقینی بنائیں۔کیجریوال کا الزام ہے کہ وفاقی حکومت ان کے واسطے مشکلات پیدا کرنے کیلئے ایل جی اور انکے ذریعے بیوروکریسی کو کنٹرول کر رہی ہے ، سرکاری افسران کا الزام ہے کہ آپ پارٹی کے کئی رہنماؤں اور کارکنوں نے چیف سیکرٹری کیساتھ مار پیٹ کی تھی۔کیجریوال کے مطابق ایل جی اور افسران کی سردمہری کے باعث حکومت کے ترقیاتی کام متاثر ہو رہے ہیں۔اس لئے انہوں نے ایل بیجل پر دباؤ ڈالنے کیلئے انکی رہائش گاہ میں ہی بستر بچھا لیا ہے جبکہ ان کیساتھ گئے ہوئے دو وزیروں ستیندر جین اور منیش سسوڈیا نے بھوک ہڑتال بھی شروع کر دی ہے ۔