غزہ، نیویارک، ماسکو اسلام آباد، لاہور ( خبر نگار خصوصی، وقائع نگار خصوصی، نمائندہ خصوصی سے ، بیورورپورٹ،خبر ایجنسیاں) امریکی سفارت خانے کی مقبوضہ بیت المقدس منتقلی پر غزہ میں احتجاج کے دوران پیر کے روز اسرائیلی فوج کی براہ راست فائرنگ سے جاں بحق فلسطینیوں کی تعداد 61 ہوگئی۔ شہدا میں 16 بچے بھی شامل ہیں، منگل 15 مئی کو اسرائیل کے قیام 70 سال پورے ہونے پر فلسطین بھر میں یوم نکبہ منایا گیا، فلسطینی اس دن کو تباہی کا دن قرار دیتے ہیں، اسرائیل کے قیام کے 7 لاکھ فلسطینیوں کو نقل مکانی پر مجبور کیا گیا تھا۔ یوم نکبہ سے ایک روز قبل امریکی سفارتخانے کی القدس منتقلی پر احتجاج کے دوران اسرائیلی خونریزی سے فلسطین کی فضا سوگوار رہی شہید ہونے والے 61 فلسطینیوں کی تدفین کی گئی۔ صدر محمود عباس کی اپیل پر فلسطین بھر میں ہڑتال کی گئی۔ دریں اثنا اسرائیلی پولیس نے مقبوضہ بیت المقدس میں فلسطینی خواتین کو وحشیانہ تشدد کا نشانہ بنایا ، حماس کے مختلف مقامات کو فضائی حملوں سے نشانہ بنایا، احتجاج کے دوران ایک اسرائیلی فوجی مارا گیا۔ امریکا نے اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل میں مستقل رکن ہونے کا فائدہ اٹھاتے ہوئے اسرائیلی فوج کے اقدامات کی آزادانہ تحقیقات کرانے کی قرارداد ویٹو کر دی ہے ۔ منگل کو سلامتی کونسل کا ہنگامی اجلاس ہوا، غزہ میں قتل عام پر یو این سکیورٹی کونسل کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے فلسطینی سفیر ریاض منصور نے کہا ہے کہ اسرائیل کا فلسطینیوں سے رویہ ظالمانہ ہے ، احتجاج کا حق رکھتے ہیں۔کتنے فلسطینی مارے جائیں جس کے بعد آپ ایکشن لیں، آپ سب کیوں مفلوج ہو چکے ہیں۔ کویت کی جانب سے سلامتی کونسل کا ہنگامی اجلاس بلانے کی درخواست کو منظوری نہ مل سکی ، اسے امریکہ نے روک دیا جس کے بعد سلامتی کونسل اجلاس جمعرات کو ہوگا۔کویت فلسطینیوں کو تحفظ فراہم کرنے کی قرار داد لائے گا۔ دریں اثنا اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کے 10 اراکین چین، فرانس، بولیویا، آئیوری کوسٹ، استوائی گنی، قزاقستان، کویت، ہالینڈ، پیرو اور سویڈن نے سیکرٹری جنرل کے نام مراسلہ میں مطالبہ کیا کہ اسرائیل سے فلسطین کی مقبوضہ زمین پر غیر قانونی رہائشی بستیوں کی تعمیر کو بند کرنے کے فیصلے کی پاسداری کرائی جائے ۔ دریں اثنا روسی وزیر خارجہ نے کہا امریکی اقدام عالمی برادری کے فیصلے کے منافی ہے ،ترک صدر اردوان نے کہا ہے کہ فلسطین المیہ کے ذمہ داروں اور چپ سادھنے والوں پر لعنت بھیجتا ہوں،اردو ان نے کہا ا و آئی سی کے جمعہ کے اجلاس میں استنبول کی جانب سے دنیا کو بھرپور پیغام دیا جائے گا۔ انہوں نے لندن میں برطانوی وزیر اعظم کے ساتھ خطاب کرتے ہوئے کہا او آئی سی کے تمام ارکان کو مدعو کیا گیا ہے ۔ برطانوی وزیر اعظم نے کہا اس طرح کی کارروائیوں سے امن عمل کو نقصان ہوگا ۔ عرب لیگ نے کہا امریکی سفارت خانے کی القدس منتقلی خطرناک پیش رفت ہے ۔ عرب لیگ کی مستقل کمیٹی برائے انسانی حقوق نے ہیگ میں قائم بین الاقوامی فوجداری عدالت کی چیف پراسیکیوٹر سے قابض اسرائیل کے فلسطینیوں کے خلاف جرائم کی فوری تحقیقات کا مطالبہ کردیا۔ یورپی یونین کے خارجہ امور کی نگران فیدیریکا موگیرینی نے کہا ہے کہ اسرائیل طاقت کا غیر ضروری استعمال نہ کرے ، اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل انتونیو گوٹیرش نے بھی فریقین سے امن برقرار رکھنے کی اپیل کی ہے ۔ مصری وزیر خارجہ نے کہا مشرقی بیت المقدس فلسطینی دارالحکومت ہے ، ہیومن رائٹس واچ نے کہا فلسطینی بند پنجرے میں زندگی گزارنے پر مجبور ہیں، ایگزیکٹو ڈائریکٹر نے غزہ پٹی پر فلسطینی شہریوں کی ہلاکت کو ‘خون کا تالاب’ قرار دیا۔ فلسطین میں اسرائیلی بربریت کیخلاف پاکستان میں سینیٹ نے فلسطین میں اسرائیل کی کی جارحیت کے خلاف مذمتی قرار داد متفقہ منظور کرلی ، قو می اسمبلی میں بھی اسرائیلی فوج کی جانب سے فلسطینیوں کے قتل عام کے خلاف قرارداد متفقہ طور پر منظور کر لی۔ پاکستان کے مختلف شہروں میں فلسطین میں اسرائیلی جارحیت کیخلاف احتجاجی مظاہرے کئے گئے ۔ لاہور میں مجلس وحدت مسلمین کے رہنماؤں نے مشترکہ پریس کانفرنس میں قتل عام کی مذمت کی۔ لاہور میں اسلامی جمعیت طلبہ نے امریکی قونصل خانے کے باہر زبردست احتجاجی مظاہرہ کیا۔ لاہوراخبار مارکیٹ کے باہر قائد ورلڈ پاسبان علامہ محمد ممتاز اعوان کی قیادت میں ایک بھرپور تحفظ القدس مظاہرہ کیا گیا ، پاکستانی ترجمان دفتر خارجہ نے کہا ہے امریکی سفارتخانے کی منتقلی کیخلاف احتجا ج فطری عمل ہے ۔اقوام متحدہ اور عالمی ادارے فلسطین میں قتل وغارت بند کرائیں۔