کراچی/لاہور (سٹاف رپورٹر،نمائندہ خصوصی سے ،مانیٹرنگ ڈیسک ) مرکزی رویتِ ہلال کمیٹی پاکستان کے چیئرمین مفتی منیب الرحمن نے اعلان کیا ہے کہ ماہِ شوال المکرم 1439 ھ کے چاند کی رویت کا شرعی فیصلہ کرنے کیلئے مرکزی رویتِ ہلال کمیٹی پاکستان کا اجلاس آج جمعرات14 جون 2018 ئکو بعد نمازِعصردفترمحکمۂ موسمیات (میٹ کمپلیکس)،موسمیات چورنگی،یونیورسٹی روڈ کراچی میں منعقد ہوگا علاوہ ازیں شعبہ فلکیات جامعۃ الرشید نے عید الفطرکے چاند سے متعلق تحقیق کے بعد واضح کیا ہے کہ جمعرات 29 رمضان (14جون) کوپاکستان میں چاند نظرآنے کا امکان تقریباً نہیں ہے ، شوال المعظم کے چاند کی پیدائش عالمی معیاری وقت کے مطابق بروزبدھ 13 جون 2018 کو 19:43 GMT/UT پراورپاکستانی معیاری وقت کے مطابق بدھ اورجمعرات کی درمیانی شب 00:43 پرہوگی،پورے ایشیا سمیت اکثردنیا میں اس روزکا چاند،سورج سے پہلے غروب ہوجائے گا یا اسکی سطح الارضی ولادت ہی غروبِ آفتاب کے بعد ہوگی اکثرمعیاراتِ رویتِ ہلال حتیٰ کہ ملائیشیا کے ڈاکٹرالیاس کے تینوں معیارات کے مطابق اس روزپاکستان میں چاند نظر آنیکا امکان نہیں۔بعض معیارات کے مطابق صرف انتہائی جنوبی پاکستان میں اس روز چاند نظر آنے کا امکان انتہائی معمولی و مشتبہ سا ہے ۔ اس ضمن میں 92‘‘ نیوز سے گفتگو کرتے ہوئے رویت ہلال ریسرچ کونسل کے مرکزی سیکرٹری جنرل خالد اعجاز مفتی نے کہا کہ کم عمری کے سبب شوال کا چاند آج ملک بھر میں دکھائی نہ دینے اور عید 16جون کوہونے کا امکا ن ہے ۔دریں اثنائسعودی عرب اور خلیجی ریاستوں میں بھی عید کا چاند دیکھنے کیلئے اجلاس آج ہونگے ۔مفتی پوپلزئی نے بھی مسجد قاسم خان میں عید کا چاند دیکھنے کیلئے اجلاس بلا لیا۔