لاہور (خصوصی رپورٹر،مانیٹرنگ ڈیسک) مسلم لیگ( ن) نے بھی کارکنوں کی شکایت پرٹکٹوں پر نظر ثانی کیلئے بورڈ بنا دیا۔ مسلم لیگ ن کے رہنما مشاہد حسین سید نے کہاٹکٹ نہ ملنے پر ناراض ہونے والی خواتین کے معاملے ریویوبورڈبنادیا جس میں سعد رفیق، نزہت صادق اور ذکیہ شاہنواز شامل ہیں، بورڈ ٹکٹوں کی تقسیم پردوبارہ غور کرکے رپورٹ شہباز شریف کو پیش کریگا۔دوسری جانب مسلم لیگ ن نے میڈیاسیل کا بھی باقاعدہ آغاز کردیا۔ 180ماڈل ٹاؤن لاہور میں بنائے جانے والے میڈیا سیل میں مریم اورنگزیب، مشاہد حسین سید ،پرویز رشیداور ان کی ٹیم انتخابات کے دوران روزانہ میڈیا کو بریفنگ دے گی۔ مسلم لیگ نے سندھی اور پشتو میڈیا کیلئے ترجمان مقرر کردئے جبکہ سوشل، الیکٹرانک اور پرنٹ میڈیا کے علیحدہ علیحدہ کوآرڈینیٹرمقرر کئے ہیں۔مسلم لیگ(ن) کی ترجمان مریم اورنگزیب، مشاہد حسین سید اور پرویز رشید نے صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا آئین پر ڈاکہ ڈالنے والے کبھی واپس نہیں آتے ، پرویز مشرف بھی واپس نہیں آیئنگے ،وہ عدالت سے شرائط منوارہے ہیں ۔ ذولفی بخاری کا نام لاڈلے کی سفارش پرای سی ایل سے نکالا گیا۔مشاہد حسین سید نے کہا وزارت عظمی کیلئے تین امیدوارشہبازشریف ،عمران خان اورآصف زرداری ہیں۔ گیلپ سروے ، پل ڈیٹ، وال سٹریٹ جرنل سب نے ن لیگ کی مضبوط پوزیشن کی نشاندہی کی، ریحام کی کتاب پر عمران خان اور ریحام سے ہی پوچھا جائے ، نوازشریف کے جیل جانے کی باتیں مفروضہ ہیں، پارٹی ٹکٹ کیلئے جو درخواستیں میں نے دیکھیں ان میں چودھری نثار کی درخواست نہیں۔دوسری جانب سا بق وفاقی وزیر قانون زاہد حامد کو میڈیا سیل میں مسلم لیگی امیدواروں کے قانونی مسائل کا انچارچ بنادیا گیا۔