لاہور (کامرس رپورٹر،مانیٹرنگ ڈیسک،نیوز ایجنسیاں) مسلم لیگ (ن) کی رہنما مریم نواز نے کہا ہے اﷲ سے دعا ہے ’’ووٹ کی عزت مہم‘‘میں ہمیں کامیاب کرے کیونکہ اس کا وقت آگیا اور کامیابی قریب ہے ،ووٹر سے کہتی ہوں باہر نکلیں، ابھی نہیں تو کبھی نہیں، نواز شریف سے جان چھڑانے کا فیصلہ پہلے ہی کرلیا گیا تھا،ان کی نااہلی سکرپٹ کا حصہ اور فکسڈ میچ کے تحت ہوئی مگروہ ڈرنے کی بجائے ڈٹ گئے اور اب یہ لوگ کبھی دائیں کبھی بائیں کبھی آگے کبھی پیچھے دیکھ رہے ہیں،ان کی سب منصوبہ بندی فیل ہو گئی، نواز شریف آئین و قانونی کی حکمرانی کے لئے مقدمات کا سامنا اور تکالیف برداشت کررہا ہے ۔ایوان عدل لاہور میں کاغذات نامزدگی کی جانچ پڑتال کے موقع پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہاپوری قوم کومعلوم تھا شیخ رشید کے کیس کا کیا فیصلہ آنا ہے اس لئے اسے سننا گوارا نہیں کیا،جب کسی فیصلے کا علم ہو تو پھر اس پر کسی طرح کی رائے کا اظہار نہیں کیا جاتا، فیصلے سے ساری تصویر واضح ہو جاتی ہے ، یہ روایت 70سالوں سے چلی آرہی ہے کہ عوام کے منتخب وزیر اعظم کو استعمال کئے ہوئے ٹشو پیپر کی طرح باہر پھینک دو ،آئین کو توڑنے والا عدالت آتے ہوئے ہسپتال اور پھر کمر درد کا بہانہ بنا کر باہر بھی چلا گیا لیکن اسے بلایا اور اس کا انتظار کیا جارہا ہے ، اس نے کاغذات نامزدگی بھی جمع کر ادئیے ، ایک فاضل جج صاحب کہہ رہے ہیں آپ تشریف لائیں کوئی گرفتار نہیں کرے گا ، ڈکٹیٹر کو آزادی دی جارہی ہے اورمنتخب وزیراعظم کو رسوا کیا جاتا رہا ہے ،ڈکٹیٹر نے دو بار آئین توڑا ، 60ججز کو قلم کی ایک جنبش سے نکال باہر کیا ، گھروں میں نظر بند کیا لیکن کوئی بات نہیں، انتخابات ملتوی کرنے یا چالیں چلنے کا وقت گزر گیا،مسلم لیگ (ن)وفاق اور پنجاب میں حکومت بنائے گی۔قبل ازیں مریم نواز نے ریٹرننگ افسر کو بتایا آج ( جمعرات ) کو صبح 9 بجے میری فلائٹ ہے آپ کے پاس نہیں آسکوں گی، ریٹرننگ افسر نے انہیں این اے 127 کے کاغذات کی جانچ پڑتال سے استثنیٰ دیتے ہوئے کہا آپ اپنے وکیل کو بھیج دیں۔ پی پی 173اور این اے 125کے ریٹرننگ افسر نے اعتراض سنے جانے کے موقع پرسوال کیا پانی کے بحران سے کیسے نمٹیں گی؟ ، مریم نواز نے جواب دیا چھوٹے بڑے ڈیمز بننے چاہئیں، کالا باغ ڈیم پرقومی اتفاق رائے نا گزیر ہے ۔ریٹرننگ افسر نے پوچھا بھارت اور افغانستان سے خارجہ پالیسی کوکس تناظر میں دیکھتی ہیں؟، مریم نواز نے کہا خارجہ پالیسی بنانا پارلیمنٹ اور منتخب نمائندوں کا کام ہے ، ہمسایہ ممالک سے کشیدگی نہیں ہونی چاہیے ،ریٹرننگ افسر نے پوچھا دہشتگردی سے متعلق آپ کی کیاپالیسی ہوگی؟مریم نواز نے کہا دہشتگردی کے خلاف پوری قوم کھڑی ہے ، تاریخ کے کامیاب آپریشن ضرب عضب اور رد الفساد دہشتگردی کے خلاف کیے گئے ، کوئی اچھا اور برا دہشتگرد نہیں ۔ دوسری جانب مسلم لیگ (ن) کے تاحیات قائد نوازشریف اور مریم نواز آج لندن جائیں گے جہاں وہ کلثوم نواز کی عیادت اور عید بھی اہل خانہ کے ساتھ منائیں گے ۔سابق وزیراعلی پنجاب شہباز شریف کے بیٹے سلمان شہباز شریف اور ان کی اہلیہ زینب سلمان بھی آج لندن جائینگے ۔