لاہور (اپنے نیوز رپورٹر سے )لاہور ویسٹ مینجمنٹ کمپنی کرپشن سکینڈل کے سلسلہ میں طلبی پر سابق ن لیگی ایم پی اے خواجہ سلمان رفیق نیب کی انکوائری ٹیم کے روبرو پیش ہو گئے ۔گزشتہ سلمان رفیق صبح 11بجے نیب لاہور آفس پہنچے اور انکوائری ٹیم کو اپنا بیان قلمبند کرایا۔نیب ذرائع کے مطابق نیب انکوائری ٹیم نے ان سے تقریباً ایک گھنٹے سے زائد وقت تک تحقیقاتی سوالات پوچھے اور ان کو ایک سوال نامہ بھی جاری کیا اور ہدایت کی کہ وہ جلد سے جلد ان سوالات کے جواب جمع کرائیں۔ کرپشن سکینڈل کی تحقیقات کیلئے لاہور ویسٹ مینجمنٹ کمپنی کے ممبرز بورڈ آف ڈائریکٹرز کی طلبی کا سلسلہ جاری ہے ،ندیم بابر 19 جون جبکہ خواجہ احمد حسان 20جون کو نیب حکام کے سامنے پیش ہونگے ۔قبل ازیں سابق ایم این اے مہر اشتیاق اورناصر جاوید نیب لاہور میں پیش ہو چکے ہیں۔علاوہ ازیں نیب لاہور نے سپریم کورٹ کے احکامات کی روشنی میں پنجاب کی6کمپنیزکے سی ای اوز کیخلاف آمدن سے زائد اثاثہ جات بنانیکی تحقیقات کیلئے مراسلہ جاری کر دیا اوران کو آج طلب کر لیا ہے ۔ ذرائع کے مطابق نیب لاہور متعلقہ ایگزیکٹوز کی جائیدادوں، بینک اکاؤنٹس، سرمایہ کاری اور منقولہ و غیر منقولہ مکمل جائیدادوں کے حوالے سے تحقیقات کریگا۔سپریم کورٹ کی جانب سے 56کمپنیز کرپشن سکینڈل کیس میں نیب لاہور کو اس ضمن میں 2 ہفتوں میں رپورٹ پیش کرنیکی ہدایت کی گئی ہے ۔