BN









کالم


آج کے کالم 


  


کالم آرکیو


دھوپ اتری اشجار سے بھی

پیر 30 نومبر 2020ء
سعد الله شاہ
باب حریم حرف کو کھولا نہیں گیا لکھنا جو چاہتے تھے وہ لکھا نہیں گیا خوئے گریز پائی نقش قدم نہ پوچھ منزل کی سمت کوئی بھی رستہ نہیں گیا یہ گریزئی نقش پا اپنی جگہ ایک وصف سہی مگر اختراع اور تخلیق کا سلیقہ اور قرینہ بھی تو ضروری ہے، نئے راستے تراشنا ہرکس و ناکس کام بھی تو نہیں۔ کیا کیا جائے یہ عہد بھی تو قحط الرجال کا ہے۔ اکثر رجال تو وبال ہی ثابت ہوتے ہیں۔ وہ مرد خلیق والی بات بھی نہیں، کہ جس کا ذکر حضرت اقبال نے کیا تھا۔ اقبال نے تو شاہین کا ذکر بھی کیا
مزید پڑھیے


وزیراعظم کا عزم اور پی ڈی ایم کا احتجاج

پیر 30 نومبر 2020ء
ظہور دھریجہ
وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ نواز شریف اور زرداری دونوں سلیکٹڈ تھے ، خارجہ پالیسی کے فیصلے خود کرتا ہوں ، فوج کا مجھ پر کوئی دباؤ نہیں ۔ ایک کروڑ نوکریوں اور پچاس لاکھ گھروں کا وعدہ ہر صورت پورا کریں گے ۔ وزیراعظم کا عزم اچھی بات ہے مگر یہ بھی حقیقت ہے کہ سوا دو سالوں میں گھر ملنے کی بجائے تجاوزات کے نام پر گھر گرائے گئے اور نوکریاں دینے کا وعدہ پورا تو کیا ہوا بلکہ لاکھوں لوگ ملازمتوں سے ہاتھ دھو بیٹھے ۔ ابھی حال ہی میں ریڈیو پاکستان ، پی ٹی
مزید پڑھیے


’’بڑا ہولینے دو !‘‘

پیر 30 نومبر 2020ء
احسان الرحمٰن
یہ گیارہ مارچ 1948ء کا ایک خوشگوار دن تھا ، مسلم لیگ کے چارٹر سے پاکستان دنیا کے نقشے پر آچکا تھا ،قائد اعظم بیماریوں کے ساتھ ساتھ اس نوزائیدہ مملکت کے دشمنوں سے بھی پنجہ آزمائی کر رہے تھے۔ پاکستان پڑوسیوں کے معاملے میں کچھ زیادہ خوش نصیب واقع نہیں ہوا ۔ایک طرف افغانستان تھا جس نے ماتھے پر آنکھیں رکھی ہوئی تھیں اور دوسری جانب بھارت تھا جسکی قیادت پاکستان کی عمر چھ ماہ سے زائد نہ سمجھتی تھی۔ مسلم لیگ کے قیام پاکستان کے مطالبے پر نہرو کی بے اعتنائی سے کی گئی یہ پیشن گوئی کہ
مزید پڑھیے


یہ تھا اصل ڈیگومیرا ڈونا

پیر 30 نومبر 2020ء
اشرف شریف
صرف ایک کھلاڑی ہوتا تو ڈیگو میراڈونا پوپ سے وہ نہ کہتا جو کہنے کے بعد ایک دنیا میراڈونا کی نظریاتی شخصیت کی پرستار ہو گئی،خود پوپ بھی ۔ ڈیگو میرا ڈونا نے زندگی بھر دو ہی محبتیں پالیں‘ فٹ بال اور سوشلزم۔ شہرہ آفاق پیلے نے بے ساختہ کہا کہ ہم دونوں آسمانوں پر ایک دن ایک ساتھ فٹ بال ضرور کھیلیں گے۔1986ء میں ارجنٹائن کو ورلڈ کپ میں فتح دلانے والے میراڈونا کا جنازہ ایوان صدر میں رکھا گیا اور دس لاکھ سے زاید پرستاروں نے آخری آرام گاہ تک پہنچایا۔اس کی خواہش تھی کہ قبر والدین کے
مزید پڑھیے


مہنگائی۔ کم ہوگئی

پیر 30 نومبر 2020ء
عبداللہ طارق سہیل
ہفتہ گزراں ورداں کی سب سے بڑی خبر ملتان کے جلسے کا ماجرا نہیں ہے بلکہ یہ ہے کہ مہنگائی کم ہو گئی۔ خود وزیراعظم نے یہ خوش کن خبر سنائی اور اس کی تائید ریاستی بنک نے اپنی رپورٹ میں کی۔ دونوں پر اعتبار کیا جانا چاہیے اور ایسی رپورٹوں کو مسترد کردینا چاہیے جن میں بتایا گیا ہے کہ مہنگائی میں اضافے کی شرح ساڑھے نو نہیں‘ دس فیصد سے بھی زائد ہے اور کھانے پینے اور دوسری لازمی اشیاء کی مہنگائی سو فیصد سے بھی زیادہ ہے۔ یقین نہ ہو تو منڈی جا کر خود ملاحظہ فرما
مزید پڑھیے


اف یہ ظالمانہ نظام

پیر 30 نومبر 2020ء
مظفر بخاری
یہ جو برطانوی پارلیمانی نظام ہے، ہمارے لئے زہر قاتل ہے۔ میں جس خرابی پر غور کرتا ہوں۔ بات اس نظام تک پہنچ جاتی ہے۔ اس نظام کے تحت جس طرح کے حکمران برسراقتدار آتے ہیں، وہ آپ کے سامنے ہے۔ پاکستان میں میاں نواز شریف تین بار وزیر اعظم بنے۔ زرداری میاں چار پانچ سال تک صدر رہے ۔ وہ اب بھی ایک صوبے کے مالک و مختار ہیں۔ آپ ہی انصاف سے فرمائیے کہ یہ دونوں ان عہدوں کے مستحق تھے اور کیا کبھی عوام نے چاہا تھا کہ ان کے سروں پر وہ لوگ مسلط ہوں جو
مزید پڑھیے


دِلّورام کوثری اور کنور مِہندر سنگھ بیدی

پیر 30 نومبر 2020ء
ڈا کٹر طا ہر رضا بخاری
حکومت پنجاب کی طرف سے ’’ہفتہ شانِ رحمۃ للعالمین‘‘ کے سلسلے کی سب سے نمائندہ تقریب بین المذاہب ’’عالمی مشائخ و علمأ کنونشن‘‘تھا،جس میں معتبر سجادہ گان، معروف علمأ،اکابر مشائخ،معاصر اسلامی دنیا کے مقتدر سکالرز اورمذاہب ِ عالم کے قائدین شریک ہوئے، جن میں بطورِ خاص آرچ بشپ سبسٹین فرانسس شاہ بشپ آف لاہور، گوردوارہ پربندھک کمیٹی کے مرکزی قائد سردار بشن سنگھ اور ہندولیڈر ڈاکٹر منور چاند شامل تھے:اگر کوئی غیر مسلم ہے اور پھر بھی میرے آقاؐ کی تعظیم اور آپ ؐ سے عقیدت و ارادت کا ناطہ اور پیرایہ رکھتا ہے،تو اس کا اچھا لگنا ایک
مزید پڑھیے


ذرا نم ہو تو یہ مٹی بڑی زرخیز ہے ساقی

پیر 30 نومبر 2020ء
ہارون الرشید
شاعر کی باقی پیش گوئیاں پوری ہوئیں تو یہ بھی ہو کر رہے گی۔ کریں گے اہلِ نظر تازہ بستیاں آباد مری نگاہ نہیں سوئے کوفہ و بغداد امام غزالیؒ کا مطالعہ کیے بغیر اسلام کی علمی روایت کو سمجھا نہیں جا سکتا۔ شاید وہ واحد سکالر ہیں، جن کی زندگی میں انہیں امام کہا گیا۔ عظمت جب ٹوٹ ٹوٹ کر برستی ہے تو حیرت کو جنم دیتی اور مبالغہ کرتی ہے۔انقلاب کے بعد ایران کے پہلے منتخب صدر نے شاید اسی لیے آیت اللہ روح اللہ خمینی کو امام کا لقب دیا تھا۔ فرقہ واریت ابھر آئی تھی، اسمٰعیلی فتنہ برپا تھا۔
مزید پڑھیے


اساتذہ کے تبادلے التوا کا شکار

پیر 30 نومبر 2020ء
اداریہ
ڈسٹرکٹ ایجوکیشن اتھارٹیز کی غفلت سے 16ہزار اساتذہ کے تبادلوں کا عمل تاخیر کا شکار ہو گیا ہے، مقررہ وقت میں تبادلوں کے لئے دیئے گئے کاغذات کی تصدیق نہ ہو سکی۔ پنجاب حکومت نے رشوت اور سفارش کلچر کے خاتمے کے لئے سرکاری اساتذہ کی ای ٹرانسفر کا سلسلہ شروع کیا تھا۔ جس کے بعد امید قائم ہوئی تھی کہ جب اساتذہ دفاتر میں نہیں آئیں گے کلرکوں سے ملاقات نہیں ہو گی تو پھر رشوت کا سلسلہ ختم ہو جائے گا۔ لیکن ٹرانسفر کے لئے اساتذہ کو کاغذات کی تصدیق کے لئے دفاتر کے چکر کاٹنے پڑتے ہیں،
مزید پڑھیے


نوکریاں اور مکان دینے کے وعدے

پیر 30 نومبر 2020ء
اداریہ
وزیر اعظم عمران خان نے کہا ہے کہ پاکستان میں لوگوں کو انشاء اللہ پانچ سال میں ایک کروڑ سے زائد نوکریاں ملیں گی اور گھر بھی 50لاکھ سے تجاوز کر جائیں گے۔ تحریک انصاف نے 2018ء کے الیکشن میں اپنے منشور کا اعلان کیا تو لوگوں نے اس پر حیرانی کا اظہار کیا،جب پی ٹی آئی اقتدار میں آئی تو اپوزیشن جماعتوں نے ایک کروڑ نوکریاں اور 50لاکھ گھر نہ ملنے پر اسے آڑے ہاتھوں لیا۔ اپوزیشن رہنما ہر تقریر میں انہیں گھروں اور ملازمتوں کے بارے وعدے یاد دلاتے تھے لیکن پی ٹی آئی کے رہنما کہتے تھے
مزید پڑھیے


مقبوضہ کشمیر پر او آئی سی کی قرارداد

پیر 30 نومبر 2020ء
اداریہ
مسلم ممالک کی تنظیم او آئی سی کے وزرائے خارجہ اجلاس میں مقبوضہ کشمیر کے متعلق پاکستانی موقف کی حمایت کرتے ہوئے قرارداد منظور کی گئی ہے۔قرارداد میں بھارت سے کہا گیا ہے کہ وہ کشمیر کی آئینی حیثیت تبدیل کرکے سلامتی کونسل کی قراردادوں کی خلاف ورزی کا مرتکب ہوا ہے ۔او آئی سی نے مطالبہ کیا ہے کہ اقوام متحدہ مقبوضہ کشمیر کے لئے اپنا خصوصی ایلچی مقرر کرے تنظیم کے اراکین اس بات پر متفق نظر آئے کہ یہ ایلچی او آئی سی کے سیکرٹری جنرل، اور بھارت میں انسانی حقوق کمیشن سے بات کرکے اپنی رپورٹ
مزید پڑھیے


سوچی سمجھی سازش؟

پیر 30 نومبر 2020ء
عا رف نظا می
ایران کے ایٹمی پروگرام کے روح رواں ڈاکٹر محسن فخری زادکا اسرائیل کے ہاتھوں دن دہاڑے قتل اس امر کی غمازی کرتا ہے کہ خطے کے حالات خراب سے خراب تر ہوتے جا رہے ہیں۔ ڈاکٹر فخری کا شمار ایران کے جوہری پروگرام کے معماروں میں ہوتا تھا۔ انہیں دماوند میں بم دھماکے اور گاڑی پر فائرنگ کر کے مارا گیا، حملے میں ان کے چھ ساتھی بھی جاں بحق ہوئے۔اگرچہ ایران نے بدلہ لینے کا اعلان کیا ہے لیکن خدشہ ہے کہ جب تک ٹرمپ وائٹ ہاوس سے رخصت نہیں ہوجاتے وہ اس کی آڑ میں ایران پر
مزید پڑھیے


نجکاری پر اعتراض کیوں؟

اتوار 29 نومبر 2020ء
محمد عامر خاکوانی
بعض اوقات کسی خاص موضوع پر کالم لکھنا چاہ رہے ہوتے ہیں ،اتنے میں ایسی مختلف خبریں سامنے آتی ہیں جن پر کچھ لکھنا یا کہنا ضروری لگتا ہے۔ آج کا یہ کالم ایسی پہ ایک خبر اور اس پر تبصرے کے حوالے سے ہے۔ خبر سٹیل ملز سے ساڑھے چار ہزار سے زائد ملازمین نکالنے کے حوالے سے ہے۔تفصیل کے مطابق پاکستان سٹیل ملز انتظامیہ نے 4544 ملازمین کو نوکری سے برطرف کر دیا ہے، تاہم سٹیل ملز کے سکول اور کالج کے سٹاف کو نہیں نکالا گیا ہے۔ یاد رہے کہ جون میں وفاقی کابینہ نے اقتصادی رابطہ
مزید پڑھیے


پچھواڑہ

اتوار 29 نومبر 2020ء
ریاض مسن
ہمارے ایک دوست المعروف راڈو بابا، جنکا دھندا ' صاف چھپتے بھی نہیں، سامنے آتے بھی نہیں' کی مثال ہے، آج کل ایک عجیب چکر میں پڑے ہوئے ہیں۔ انکا مانناہے کہ کورونا سے آگاہی کی مہم اگرچہ ازحد ضر وری ہے لیکن اسے ترتیب دینے والوں کی یا تو نیت ٹھیک نہیں یا پھر وہ اس ریچھ کی طرح ہیں جو جنگل سے گزرتے انسان کا دوست بن گیا تھا اور دوست کی نیند میں خلل ڈالنے والی مکھیوں کو بھگاتے اسکا سر کچل بیٹھا تھا۔ جسمانی فاصلے کی بات کرنے کی بجائے سماجی دوریوں کی ’تبلیغ‘ کی جار
مزید پڑھیے


جھوٹ اور فریب کی سیاست

اتوار 29 نومبر 2020ء
ملیحہ ہاشمی
کہتے ہیں’’سیاست کے سینے میں دل نہیں ہوتا‘‘۔ سچ کہتے ہیں۔ رواں ہفتے سابق نااہل وزیر اعظم پاکستان، جناب نواز شریف صاحب کی والدہ کے انتقال پر جو سیاست کے بدصورت زاویے دیکھنے کو ملے، دیکھنے والے شرمندہ ہو گئے، ان زاویوں سے لاش پر سیاست کرنے والے شرمندہ نہ ہوئے۔پشاور جلسے سے نکلتے ہی مریم نواز صاحبہ کا یہ کہنا کہ’’ حکومت میں ذرا انسانیت نہیں کہ مجھے دادی کی وفات کی اطلاع دے دیتی‘‘، قوم کو حیرت میں مبتلا کر گیا کہ سابق جج ارشد ملک کی نازیبا ویڈیو سے لے کر مخالفین کی کمزوریوں سے ہر لمحہ
مزید پڑھیے