واشنگٹن ( ندیم منظور سلہری سے ) معر وف تجزیہ کاروں کا کہنا ہے کہ 1999ء کی کارگل جنگ جتنی بدقسمت بھارت کیلئے تھی اسکا کوئی تصور بھی نہیں کر سکتا۔ کا رگل جنگ نے بھارت کو ہلا کر رکھ دیا تھا۔ تجزیہ کار شیکھر گپتا کا کہنا ہے کہ کارگل کی جنگ واجپائی حکومت کی بجائے زیادہ تر فوجی قیادت کی ناکامی تھی۔ بہت بڑی تعداد میں پاکستانی فوجیوں کا بھارت کے اندر گھس آنا بھارتی افواج اور خفیہ اداروں کی بہت بڑی ناکامی تھی ۔پروفیسر اجے کمار شرما کا کہنا ہے کہ کارگل جنگ میں اگر نواز شریف ثابت قدم رہتے اور پرویز مشرف کی حکمت عملی کو سپورٹ کرتے تو بھارت کو دفاعی محاذ پر اتنی بُری شکست کا سامنا کرنا پڑتا جسکی تاریخ میں مثال نہ ملتی ۔دفاعی تجزیہ کار پروفیسر رویش لکھن کا کہنا ہے کہ کارگل جنگ میں بہت سے بھارتی فوجیوں کا خون بہا اس میں دو میجر جنرل بھی شامل تھے بھارتی میڈیا کیونکہ فوجی اسٹیبلشمنٹ کے زیر سایہ ہے وہ کبھی بھی حقائق سامنے لیکر نہیں آئیگا ۔بھارت کبھی بھی اس بات کو تسلیم نہیں کریگا کہ کارگل جنگ میں امریکہ اور اسرائیل کی حمایت کے باوجود اسکو شکست ہوئی۔ بھارتی اسٹیبلشمنٹ کے سابق عہدیدار رام پاسوان کا کہنا تھا کہ کسی کے وہم و گمان میں بھی نہیں تھا کہ پاکستانی فوجی بھارت کے علاقے میں گھس کر اپنی کاروائیاں شروع کر دینگے ۔ واقعہ کے بعد واجپائی حکومت انڈر پریشر رہی ۔