تل ابیب (نیٹ نیوز) مس عراق اور اسرائیل نے ایک بار پھر اکٹھی سیلفی بنا کر آن لائن پوسٹ کی ہے جس کا عنوان رکھا ہے ’’بہنوں کا ملن‘‘ ۔ گزشتہ سال مس یونیورس کے مقابلے میں شریک مس عراق سارہ عیدان اور مس اسرائیل ادارگیند لسمین نے اپنی ایک سیلفی سوشل میڈیا پر پوسٹ کی تھی جس پر شدید ردعمل دیکھنے میں آیا اور سارہ عیدان کو جان کی دھمکیاں دی گئیں جبکہ انکے خاندان کو فرار ہو کر امریکہ پناہ لینا پڑی۔دونوں نے اس سیلفی کا عنوان رکھا تھا ’’مس عراق اور مس اسرائیل کی جانب سے امن اورمحبت کا پیغام ‘‘۔مس عیدان پر اسرائیل کو تسلیم کرنے اور فلسطینیوں سے بے وفائی کے الزامات عائد کئے گئے ۔عیدان حال ہی میں میں اسرائیل گئیں اور انکی ملاقات ادارگیند لسمین سے ہوئی اور دونوں نے نئی سیلفی بنا کر پوسٹ کر دی۔ مس عیدان نے مقبوضہ بیت المقدس کے کچھ حصوں کا دورہ بھی کیا۔اسرائیلی میڈیا سے گفتگو میں عیدان نے کہا میں نہیں سمجھتی کہ عراق اور اسرائیل دشمن ملک ہیں۔اسرائیلی وزیر اعظم نیتن یاہو کے ترجمان نے دورے کا خیرمقدم کرتے ہوئے کہا کہ اسرائیل اور عربوں کے درمیان دوستانہ تعلقات سے مشرق وسطیٰ میں ہم سب ایک بہترمستقبل میں داخل ہو سکتے ہیں۔