BN

اشرف شریف


میرا لاہور بد معاشوں کے حوالے


مسلم لیگ ن کے دوستوںکو مبارک ہو‘ محترمہ مریم نواز اور نوازشریف نے فون کر کے کھوکھر برادران کی جمہوری جدوجہد کو خراج تحسین پیش کیا ہے۔ مسلم لیگ ن کے قائد اور نائب صدر کو دکھ ہے کہ جمہوری جدوجہد کرنے والے کھوکھر برادران کے غیرقانونی قبضے سے 38 کنال قیمتی اراضی واگزار کروا کر سرکار نے اپنی تحویل میں کیوں لی۔ یادش بخیر اب تو شاید توبہ تائب ہو گئے ہوں‘ مسلم لیگ ن کا ایک اہم کردار سہیل ضیا بٹ رہے ہیں۔کوٹ لکھپت میں استاد یونس چوہدری مسٹر پاکستان نے باڈی بلڈنگ کا کلب بنارکھا تھا،میں
بدھ 27 جنوری 2021ء

پنجاب میں ایک نہیں دو تبدیلیوں کا امکان

پیر 25 جنوری 2021ء
اشرف شریف
ساہیوال کے اکثر لوگوں کی طرح میں بھی حیران ہوا کہ وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار تین دن مسلسل شہر میں بیٹھے رہے‘ انہوں نے کئی اعلیٰ افسران کو اپنے پھوپھا تیمور کے گھر بلا کر میٹنگ کی۔ ساہیوال میں کئی ترقیاتی منصوبوں کا اعلان کیا اور ایک ہی سڑک کا پچھلے دو سال میں تین بار افتتاح کیا ہے۔ یہ حیرانی اور بڑھ جاتی ہے جب پتہ چلتا ہے کہ گورنر پنجاب چودھری سرور ہفتے میں دو دن ساہیوال میں گزار رہے ہیں۔میں ان کے تعاقب میں ساہیوال جا پہنچا جہاں معاملات ایک نئے ڈھب پر دیکھے۔ چودھری سرور مقامی
مزید پڑھیے


فارن فنڈنگ ؛سب جماعتیں قصور وار

هفته 23 جنوری 2021ء
اشرف شریف
سابق سینیٹر طارق چودھری صاحب نے فارن فنڈنگ سلسلے کا دوسرا کالم پڑھ کر تشنگی برقرار رہنے کا بتایا۔ طارق چودھری ان برسوں میں سینٹ کے سرگرم رکن رہے جب پاکستان میں افغان جہاد‘ امریکہ اور سعودی عرب کا کردار اہم ہوا کرتا تھا۔ وہ بتا رہے تھے کہ نواز شریف نے شاہ فہد سے بھی بے نظیر بھٹو کو ہرانے کے لئے انتخابی اخراجات کے نام پر فنڈز لئے۔ میں نے پوچھا اسامہ بن لادن کے فنڈز فراہمی کے گواہ مل سکتے ہیں؟ طارق چودھری نے خالد خواجہ اور کرنل امام کے نام لئے۔ دونوں چند برس قبل پراسرار
مزید پڑھیے


سایوں سے فارن فنڈنگ تک

بدھ 20 جنوری 2021ء
اشرف شریف
ممتاز قانون دان اور ہمارے کالم نگار آصف محمود نے توجہ دلائی کہ فارن فنڈنگ والے کالم کے کچھ گوشوں پر مزید لکھیں،آصف چاہتے تھے کہ پی پی او 2002 کی بجائے میں 2017 کے الیکشن ایکٹ کو سامنے رکھ کر اس کیس کو دیکھوں۔میں اپنے دوست کالم نگار کو قانون سے پہلے سایوں کی بات سنانے لگا۔ سایہ کسے کہتے ہیں: جو روشنی کو روک کر اپنا وجود پھیلاتا ہے۔ سیاست میں بھی سائے ہوتے ہیں ، حقائق کی روشنی کو اپنے سامنے رکھتے ہیں لیکن دوسروں کو اپنے پراسرار وجود سے پار دیکھنے نہیں دیتے۔ سائے کوتاریک
مزید پڑھیے


فارن فنڈنگ کیس اور اپوزیشن کی خوش فہمی

پیر 18 جنوری 2021ء
اشرف شریف
پی ڈی ایم پر ن لیگ کے قانون فہموں کا اثر ہونے لگا ہے ،مریم نواز کی طرح اکثر رہنماوں کو لگتا ہے فارن فنڈنگ کیس میں تحریک انصاف کالعدم قرار پا جائے گی۔معاملہ قانونی ہے اس لئے جذبات کو ٹھوڑا دور رکھ کر دیکھتے ہیں کہ اس معاملے کا نتیجہ ممکنہ طور پر کیا برآمد ہو سکتا ہے۔ ہم ہی نہیں ہمسائے میں بھی فارن فنڈنگ کا تنازع موجود ہے۔بھارتی قانون کے تحت پارلیمنٹ کے اراکین‘ سیاسی جماعتیں‘ سرکاری افسران‘ ججز اور میڈیا پرسنز غیر ملکی عطیات وصول نہیں کر سکتے۔ تاہم 2017ء میں 1976ء کے ایکٹ میں ترمیم کے
مزید پڑھیے



پارلیمانی جمہوریت ہمارے لئے نہیں

هفته 16 جنوری 2021ء
اشرف شریف
عمر منظور اور علی خان جاننا چاہتے تھے کہ عمران خان اب تک ہماری امیدوں پر پورے کیوں نہیں اترے‘جب وہ یہ سوال پوچھ رہے تھے تو میرے حافظے میں 1997 میں ہیوی مینڈیٹ والے انتخابات کے بعد قومی اسمبلی میں لیڈر آف اپوزیشن بے نظیر بھٹو کا خطاب گونج رہا تھا۔وہ کہہ رہی تھیں پارلیمانی نظام اور سیاستدانوں کو بدنام کیا جاتا ہے ۔23 برس بیتے نہ پیپلز پارٹی پارلیمانی جمہوریت کی افادیت ثابت کر سکی نہ مسلم لیگ ن ۔میرے خیال میں اگر ذوالفقار علی بھٹو اس نظام میں سے ہمارے مسائل کا حل تلاش نہیں کر
مزید پڑھیے


مولانا چائے کے وقت کیا یاد رکھیں

بدھ 13 جنوری 2021ء
اشرف شریف
مولانا فضل الرحمن کے لیے پیغام بڑا واضح ہے ’’پنڈی آئیں گے تو چائے پانی پوچھیں گے لیکن ان کے آنے کی کوئی وجہ نہیں‘‘۔ فروری 2019ء کے بعد فوج میں چائے پلانے کا مطلب تبدیل ہو چکا۔ اب یہ اس خاطر تواضع کے ہم معنی ہے جو محاورے میں استعمال ہوتی ہے ، اس حالت کا بیان جو ابھی نندن کے ساتھ بیتی۔ مولانا رمز شناس ہیں۔ کیوں نہ ہوں ،ساری عمر اسی کوچے میں مصرعے اٹھاتے اور غزل سرا رہے ہیں۔ فوراً جواب دیا ’’خود تو پاپا جونز کے پیزے کھائیں او رہمیں چائے پر ٹرخا دیں‘
مزید پڑھیے


بھارتی کسانوں کا احتجاج :مسائل تو پاکستان میں بھی ہیں

پیر 11 جنوری 2021ء
اشرف شریف
بھارت میں نئے زرعی قوانین کے خلاف احتجاج کو تین ہفتے ہونے کو ہیں۔ یوں تو پورے بھارت کے کسان احتجاج کر رہے ہیں لیکن پنجاب میں اس احتجاج میں سے مستقبل کی کئی تحریکیں جھانکتی معلوم ہو رہی ہیں۔ کتنے ہی پنجابی گلوکار، اداکار اور کھلاڑی مودی حکومت پر سخت تنقید کرتے ہوئے تحریک آزادی کے دوران اپنے سکھ رہنمائوں کی غلط پالیسیوںکی مذمت کر رہے ہیں‘ قائد اعظم محمد علی جناح کی تعریف کی جا رہی ہے‘ کئی لوگ خالصتان زندہ باد کے نعرے لگا رہے ہیں۔ صاف دکھائی دیتا ہے کہ پنجاب بھارت کے ہاتھ
مزید پڑھیے


ہزارہ قتل ؛ سفاک سیاست پیشقدمی کر چکی

هفته 09 جنوری 2021ء
اشرف شریف
ترقی کرتی دنیا اور پاکستان میں یہی فرق ہے کہ وہ نئے لمحے میں آگے بڑھ جاتے ہیں اور پاکستان ایک سانحہ کی گرفت میں آ کر ٹھہر جاتا ہے۔ ہفتہ ہونے کو آیا 11ہزارہ باشندے قتل ہوئے۔ انسانی ہمدردی کی جگہ اب سفاک سیاست پیشقدمی کر چکی ہے۔ افسوسناک پہلو یہ کہ وزیر اعظم نے وقت ضائع کرنے کے ساتھ اپنی ساکھ بطور لیڈر ماند کر لی ہے۔ پہلے ایک ’’اگر‘‘ کی پڑتال کر لیتے ہیں‘ کسی نے کہا تو نہیں مگر بین السطور ضرور بات ہوتی ہے کہ اگر وزیر اعظم دھرنے پر بیٹھے ہزارہ افراد سے تعزیت کے
مزید پڑھیے


روف طاہر اداس کر گئے

بدھ 06 جنوری 2021ء
اشرف شریف
دس نمبر ڈائیوو بس واپڈا ٹائون سے لاہور ریلوے سٹیشن تک چلا کرتی تھی۔ ہمیشہ سفاری سوٹ میں ملبوسروف طاہر پہلے سٹاپ سے سوار ہوتے، عموماً سب سے آخر والی سیٹوں پر بیٹھتے۔ میں کالج روڈ سے سوار ہوتا تو ان کے ساتھ جگہ مل جاتی۔ آشنائی والا تعلق کئی برسوں سے تھا۔ اس سفر کے دوران علمی و صحافتی موضوعات پر بات ہوتی۔ہم بات کرتے کہ لکھنے والے سطحیت کا شکار ہو رہے ہیں، ہم اس بات پر دکھی ہوتے کہ سماج میں تلخی گھولنے والے زیادہ ہیں،محبت کے مبلغ کم ہوتے جا رہے ہیں۔ وہ جانتے تھے کہ
مزید پڑھیے