BN

اشرف شریف


تبدیلی کی خواہش


آج کل کئی طرح کی آن لائن سروسز ہمیں مل رہی ہیں۔ آپ آن لائن ٹیکسی منگوا سکتے ہیں۔ آن لائن شاپنگ کر سکتے ہیں‘ آن لائن سروس کے ذریعے کھانا منگوا سکتے ہیں‘ کبھی آپ نے سوچا کہ آپ کا آرڈر پورا کرنے کے لئے جس انسان کو متعین کیا جا رہا ہے وہ محض ایک ڈرائیور یا ڈلیوری بوائے نہیں‘ ایک انسان ہے۔ گزشتہ دنوںہمارے دوست کے ساتھ ایک واقعہ پیش آیا‘ اسی کی زبانی سنیں۔ دفتر سے دیر گئے گھر پہنچا‘ کھانا تیار تھا لیکن دل کچھ اور کھانے کو چاہتا تھا۔ فون اٹھایا اور ایک فوڈ کمپنی
هفته 14 نومبر 2020ء

اعلان لاتعلقی کی آہٹ

بدھ 11 نومبر 2020ء
اشرف شریف
بیلنس آف پاور ایک تھیوری ہے۔ طاقت کا ترازو سیدھا کرنا۔ مخالف کے پاس الٰہ دین کا چراغ آ جائے تو اس کے برابر طاقت حاصل کرنے کے لیے بوتل کا جن آزاد کرنا پڑتا ہے۔ مسلم لیگ نے کبھی سیاسی تحریک چلائی نہ اسے اس کی تربیت ہے۔ اب بھی اسے سیاسی ا تالیق جو پڑھا رہے ہیں وہ سیاست نہیں‘ یہی وجہ ہے کہ پی ڈی ایم بنا کر حکومت کے خلاف اپوزیشن نے طاقت کا جو توازن قائم کرنے کی کوشش کی اس کا سارا فائدہ سیاسی موسمیات سے واقف اور تربیت یافتہ پیپلزپارٹی کو ہورہا ہے۔
مزید پڑھیے


اچھے کی امید کیسے رکھیں؟

هفته 07 نومبر 2020ء
اشرف شریف
پاکستان کے پائوں دلدل میں دھنسے ہیں‘ آگے بڑھنے کے لئے جونہی زور لگاتے ہیں‘ دلدل اور نیچے کھینچ لیتی ہے۔ آپ جانتے ہیں اس دلدل کے اندر کون سا کیچڑ ہے جو ہمیں پاتال میں لے جا رہا ہے۔ ناسمجھی‘ اپنے مستقبل سے لاتعلقی اور عقل سے دشمنی۔ ایک پروگرام نشر ہوا‘ وفاقی وزیر فیصل واوڈا وزیر اعظم عمران خان کو خدائی اوتار بتا رہے تھے۔ کہہ رہے تھے کہ خدا کے بعد عمران خان ہے جو ملک کو بچا سکتا ہے‘ فیصل واوڈا نے کچھ اور الفاظ کہے تھے جنہیں نقل نہیں کیا جا سکتا‘ افسوس اور مذمت کی
مزید پڑھیے


ازجامی بے چارا رسانید سلامے

بدھ 04 نومبر 2020ء
اشرف شریف
بچے گھر کے تبدیل معمولات پر سوال کریں تو ان کا جواب دینا ضروری ہو جاتا ہے‘ گھر کی تربیت اسی کو کہتے ہیں۔ عید میلاد النبیؐ پر مناہل نے فرمائش کی کہ یوٹیوب پر کوئی نعت لگائوں۔ امی مرحومہ ام حبیبہ کی پڑھی گئی نعتیں اسی شوق سے ہلکی ہلکی آواز میں پڑھا کرتیں۔ اتنی مدھم آواز کہ جسے ان کی گود میں لیٹا بچہ ہی بس سن سکتا۔ کئی بار ہم نے ان کی زبان سے یہ نعتیں لوری کی صورت میں سنیں۔ میں نے سب سے پہلے ام حبیبہ کی آواز میں مولانا جامی کی لکھی نعت
مزید پڑھیے


دیتے ہیں دھوکہ یہ بازی گر کھلا

پیر 02 نومبر 2020ء
اشرف شریف
بھارت نے امریکہ سے ایک سیٹلائٹ ٹیکنالوجی تک رسائی لی ہے۔ پاکستان کے لیے یہ پریشان کن ہے کہ پاکستان کی حساس تنصیبات اور سرحدوں پر ہونے والی ذرا ذرا سی سرگرمی امریکہ کے ذریعے بھارت تک پہنچ جائے گی۔ امریکہ‘ برطانیہ‘ فرانس‘ چین اور روس کے سوایہ سیٹلائٹ مانیٹرنگ اینڈ کمیونی کیشن ٹیکنالوجی کسی ملک کے پاس نہیں۔ رافیل طیاروں کے بعد بھارت نے یہ دوسری ٹیکنالوجی حاصل کی ہے جو پاکستان کے لیے مسائل پیدا کرسکتی ہے۔ بھارت نے جنگ کی تیاری ہی پر زور نہیں دیا بلکہ اسرائیل سے دنیا کی جدید ترین زرعی ٹیکنالوجی حاصل کر
مزید پڑھیے



فرانس کے مسلمانوں کی طاقت

بدھ 28 اکتوبر 2020ء
اشرف شریف
’’مسلم لابی اینڈ مسلم ووٹ ان فرانس‘‘ یہ موضوع ہے ایمنے اجلا کی تحقیق کا جسے یونیورسٹی آف وولانگ گونگ آسٹریلیا نے شائع کیا۔ اس تحقیق میں فرانس کے مسلمانوں کی سیاسی زندگی کے کچھ گوشے تلاش کرنے کی کوشش کی گئی۔ خاص طور پر خارجہ پالیسی کی تشکیل کے حوالے سے مسلم لابی کا جو ہوا کھڑا کیا گیا ہے اس کی حقیقت کو جاننے کی سعی دکھائی دیتی ہے۔ فرانس کی سیاسی جماعتیں خیالی مسلم لابی کو ایک ووٹنگ بلاک تصور کرتی ہیں‘ ان کے خیال میں مسلمان ایک دوسرے سے جڑے ہونے کی وجہ سے ایک
مزید پڑھیے


سیاسی کفن چور

پیر 26 اکتوبر 2020ء
اشرف شریف
ایک سیاسی جماعت کو کس حد تک پختہ نظریاتی شکل کا ہونا چاہیے اور ایک سیاسی رہنما کو کس طرح کی سنجیدگی کا ثبوت دینا چاہیے یہ سوال شاید اب پاکستان کے سیاسی مبصرین کے لئے اہم نہیں رہا۔ اہمیت اس بات کو دی جا رہی ہے کہ فلاں نے فلاں وقت یہ کام کیا تھا اس لئے اب ہمارے لئے ایسا کرنا جائز اور قانونی ہو گیا ہے۔ ہماری گفتگو اور موضوع پر ماحول کا اثر گہرا ہوتا ہے۔ پنجاب میں پیپلز پارٹی غیر متعلقہ ہوتی جا رہی ہے اس لئے سیاسی مباحث میں اس کا حصہ بھی کم
مزید پڑھیے


پی ٹی وی کا کوئی وارث ہے ؟

هفته 24 اکتوبر 2020ء
اشرف شریف
ثقافتی ادارے کسی قوم کی نظریاتی شناخت اور فنون لطیفہ میں رابطے کا کام کرتے ہیں۔ یوں سمجھ لیں جو بات فلسفیوں اور عالموں کی ثقیل گفتگو سے آپ کو بیزار کردے وہی کسی نغمے‘ ڈرامے اور فلم میں ایسے سمودی جاتی ہے کہ ہم سب اس کا اثر قبول کرلیتے ہیں۔ ذوالفقار علی بھٹو نے ملک میں سینما انڈسٹری کو فروغ دیا‘ بڑے شہروں میں آرٹس کونسلیں قائم کیں‘ ثقافتی اور علمی اداروں کواپنی عمارات دیں۔ ٹی وی اور ریڈیو کو اس طرح چلایا کہ نسلی‘ لسانی اور علاقائی تعصبات کمزور ہوں اور قومی اتحاد مستحکم ہو۔ امین اقبال نجی
مزید پڑھیے


اپوزیشن کی تحریک سے کچھ سوال

بدھ 14 اکتوبر 2020ء
اشرف شریف
اب یہ بات راز نہیں رہی کہ ن لیگ سینٹ الیکشن سے پہلے حکومت گرانے کی ہر ممکن کوشش کرنا چاہتی ہے۔ اس کوشش میں مولانا فضل الرحمن شراکت دار ہیں ،جن کا قول ہے کہ موجودہ پارلیمنٹ ناجائز ہے اسے تحلیل کردیا جائے۔ مولانا اور ان کی جماعت موجودہ پارلیمانی نظام کی حامی نہیں۔ وہ صرف اس لیے اس نظام کا حصہ ہیں کہ باقی کوئی جماعت اس سلسلے میں ان کا ساتھ دینے کو تیار نہیں۔ اس بنا پر ان کے لیے یہ ایک غیر اہم معاملہ ہے کہ پارلیمنٹ ہو یا نہ ہو پھر وہ غلط یا
مزید پڑھیے


کیا باسمتی ہم سے چھن جائے گی؟

هفته 10 اکتوبر 2020ء
اشرف شریف
آپ کے پاس گائوں میں رہنے کی کیا وجہ ہے؟میں نے ایک بار اپنے دادا جی سے پوچھا۔آپ کی ساری اولاد شہر میں بس چکی۔ باغ کی دیکھ بھال اب آپ سے ہو نہیں سکتی۔طبیعت خراب ہو جائے تو وہی نیم حکیم‘نیم ڈاکٹر۔ ان کی آنکھوں میں انار کے پھولوں جیسے رنگ بھر گئے‘ محبت کی ہر یاول ان کے سفید دراز بالوں کے گرد حاشیہ بنا کر اتر آئی۔ بولے !تم جس راستے سے آئے ہو وہاں چاول کی فصل پکنے کو تیار ہے۔ اس کی خوشبو سے ملے؟نمدار مٹی میں اگے دھان کی باس ‘ وہ باس جو
مزید پڑھیے