BN

اوریا مقبول جان

ٹیکنالوجی کے خدایان یزداں و اہرمن کے پجاری

اتوار 29 اپریل 2018ء

ٹیکنالوجی کے بت کے پرستار، ہر نئی ایجاد کے موجد کو پیغمبر کا مقام دینے والے، شانزے لیزے، آکسفورڈ سٹریٹ اور ٹائمز اسکوائر نیویارک کا سفر عمرے اور حج جیسی عقیدت سے کرنے والے اور وہاں کے طواف کی کیفیتوں کو ایک ادائے عاشقانہ اور فریفتگی سے بیان کرنے والے، ادیب، دانشور، سیاستدان، استاد، تاجر، تجزیہ نگار اور ہر شعبہ زندگی کے متاثرین، بلا کے لوگ ہیں۔ گزشتہ دو سو سال سے شاید ہی کسی نے اللہ تعالی کی حاکمیت، سید الانبیاء صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کی رسالت، حضرت عیسیٰ علیہ السلام کی مسیحائی، گوتم بدھ کی انسان پرستی
مزید پڑھیے


پیشہ ورانہ خطرات سے جسمانی خود مختاری اور ’’می ٹو‘‘ تک

هفته 28 اپریل 2018ء

جدید لائف سٹائل کا کمال یہ ہے کہ اس نے بلاامتیاز مذہب، اخلاق اور اقدار ہر اس شعبے، پیشے اور کام کاج کو عزت دی ہے جس سے سرمایہ کمایا سکتا ہے یا اس سے لائف سٹائل کی آسانیاں خریدی جاسکتی ہیں۔ کیونکہ سرمایہ ایک بنیادی قدر اور منزل مقصود تھی تو اس کو کمانے کے راستے میں جو دکھ، تکلیفیں اور پریشانیاں بھی آئیں وہ قابل تکریم ہوگئیں۔ ان دکھوں، تکلیفوں، پریشانیوں اور مصیبتوں کو جدید اصطلاح میں "Occupational hazards"(پیشے سے منسلک خطرات) کہا جاتا ہے۔ مثلا کوئلے کی کانوں میں کام کرنے والے افراد عموما سینے کے امراض
مزید پڑھیے


(طَرِیْقَتِکُمُ الْمُثْلٰی (آئیڈیل لائف سٹائل

جمعه 20 اپریل 2018ء

انسانی تہذیبی کشمکش کو علامہ اقبال نے اپنے اس شعر میں جس خوبصورتی سے سمیٹا ہے، وہ اس کائنات میں معرکہ حق و باطل کی تاریخ ہے۔

ستیزہ کار رہا ہے ازل سے تا امروز

مزید پڑھیے