BN

ڈاکٹر اشفاق احمد ورک


باقی سب خیریت ہے!


دوستو! اب تو یہ عزیزی 2021 بھی ساڑھے چھے مہینے کا ہو چلا، اہلَ نظر کہتے ہیں کہ یہ بھی شکل و شباہت اور عادات و اطوار کے اعتبار سے ہُو بہو اپنے بڑے بھائی 2020 پہ گیا ہے۔ وہی کرونا زدگی، وہی کٹھورپن، وہی سنگ دلی۔ ان دونوں کی نگرانی میں زندگی اور موت نے سرِ عام آنکھ مچولی کھیلی… ان کے ہوتے ہوئے وزارتِ داخلہ میں شیخ رشید آیا… نون کی زبان سے بی بی زندہ باد کے نعرے لگے… غریبوں کا دل جلانے کے لیے اربوں روپے کے جہیز مع محل نما گھر کے، بختاور
پیر 12 جولائی 2021ء مزید پڑھیے

تیرے ’باجوے‘ دی راکھی۔۔۔

منگل 06 جولائی 2021ء
ڈاکٹر اشفاق احمد ورک
کہا جاتا ہے کہ دنیا میں آموں، سانپوں، اونٹوں اور جاٹوں کی اتنی قسمیں ہیں کہ گنائی نہیں جا سکتیں، صرف دکھائی جا سکتی ہیں بلکہ دکھانا بھی کیا ہے، یہ اپنی کسی نہ کسی حرکت (جس کو یہ کارنامہ سمجھ رہے ہوتے ہیں) کی وجہ سے نظر آ جاتے ہیں۔ جاٹوں کی سب سے بڑی نشانی یہ ہے کہ پرانے زمانے کے بادشاہوں کی طرح ان کے بارے میں اندازہ نہیں لگایا جا سکتا کہ یہ اگلے لمحے کیا کر گزریں گے؟ کسی بھی جٹ کی دوسری نشانی یہ ہے کہ یہ کسی زمین، پلاٹ، پلازے کا مالک ہو
مزید پڑھیے


کیا عمران کو واقعی خطرہ ہے؟

اتوار 04 جولائی 2021ء
ڈاکٹر اشفاق احمد ورک
جس دن سے پاکستانی وزیرِ اعظم نے کسی سچے اور کھرے مسلمان کی سی غیرتِ ایمانی کا مظاہرہ کرتے ہوئے امریکا کے زعیم صحافی کے منھ پہ Absolutely Not کا دو لفظی طمانچہ مارا ہے، اس دن سے ہماری سوسائٹی کا سب سے اہم سوال یہ بن چکا ہے کہ کیا عمران خان کو خطرہ ہے؟ اس سوال کا سیدھا اور سادہ سا جواب تو یہی ہے کہ جی جناب بالکل خطرہ ہے، شدید خطرہ ہے، قدم قدم پرخطرہ ہے! بعض لوگوں کے نزدیک عمران خان کو امریکا سے خطرہ ہے، جی ہاں! اس میں کوئی شک نہیں، ٹھیک
مزید پڑھیے


’ارشاد نامہ‘ سے ’ولایت نامہ‘ تک

منگل 29 جون 2021ء
ڈاکٹر اشفاق احمد ورک
یہ میری سوچی سمجھی رائے ہے کہ کتاب اٹھانا، کسی کے ناز اٹھانے سے کہیں زیادہ خوشگوار عمل ہے۔ مَیں نے کہیں لکھا تھا کہ آج تک دنیا میں جتنے بھی ذائقے چکھے ہیں، اُن میں کتاب کا ذائقہ سب سے منفرد اور دائمی ہے۔ یہ مجھ پر میرے اللہ کا کرم نہیں تو کیا ہے کہ اس نے میرا رزق بھی کتاب پڑھنے اور کتاب پڑھانے سے منسلک کر دیا۔ یہی وجہ ہے مجھے کام کبھی مشقت محسوس نہیں ہوا، بلکہ لطافت میں دُھلی ہوئی ، ظرافت میں نہائی ہوئی تفریح محسوس ہوتی ہے۔ دنیا میں کتنے ہی بڑے
مزید پڑھیے


ڈھا دے جو کُجھ ڈھیندا

اتوار 27 جون 2021ء
ڈاکٹر اشفاق احمد ورک
اس معاملے میں دو آرانہیں پائی جاتیں کہ امنگوں ترنگوں سے حاصل کیے گئے اس خطۂ پاک میں کسی بھی ادارے یا محکمے سے شاید ہی ’سب اچھا ہے‘ کی صدا آتی ہو ۔ ’سب اچھا‘ تو دور کی بات، اکثر محکمے تو ایسے ہیں کہ جہاں سے ہر گھڑی ’بیڑا ای غرق اے‘کی نحوست زدہ خبریں نہ صرف سنائی دیتی رہتی ہیں بلکہ ہر محبِ وطن پاکستانی کے دل میں تیر کی طرح ترازو رہتی ہیں۔ کسی بھی سیاسی وفاداری سے بالا ہو کے سوچیں تو اس کی دو ہی وجہیں نظر آتی ہیں: پہلی یہ کہ ہمارے خود
مزید پڑھیے



کتابی آبِ حیات

منگل 22 جون 2021ء
ڈاکٹر اشفاق احمد ورک
اس میں کوئی شک نہیں کہ کتاب میری زندگی کی سب سے بڑی کمزوری اور کتاب ہی میری زندگی کی سب سے بڑی طاقت رہی ہے۔شعور کے دائرے میں قدم رکھنے کے بعدکم از کم ہزاروں کتابیں نظر سے گزری ہوں گی لیکن ان میں ایسی کتابیں تو شاید انگلیوں پہ گنی جا سکتی ہیں، جنھوں نے قدموں میں زنجیریں ڈال دی ہوں، قلب و ذہن پہ انمٹ تصویریں نقش کر دی ہوں یا جن کے مطالعے کے بعد ادبی سواد،ازلی ثواب کی کیفیت میں ڈھلتا محسوس ہوا ہو۔ ایسی کتابوں میں ایک نہایت اہم کتاب مولانا محمد حسین آزاد
مزید پڑھیے


یوسفی:رسائی سے رسوئی تک!

اتوار 20 جون 2021ء
ڈاکٹر اشفاق احمد ورک
اُردو دنیا کے بے مِثل مزاح نگار،ناقابلِ تقلید نثر نگار اور عملی زندگی میں کامیاب ترین انسان جناب مشتاق احمد یوسفی کی آج تیسری برسی ہے۔وہ چار ستمبر 1921کو ٹونک راجھستان کے یوسف زئی گھرانے میں جناب عبدالکریم یوسفی کے ہاں تولد ہوئے اور 20 جون 2018 کو ڈھائی ماہ کم ستانوے برس کی عمر میں کراچی میں انتقال کیا۔ ست ماہے پیدا ہونے والے اس بچے کی پوری زندگی مسلسل کامرانیوں سے اَٹی پڑی ہے۔ سنہری کامیابیوں کا جے پور سکول کالج سے شروع ہونے والا سفر علی گڑھ یونیورسٹی میں ایم اے فلسفہ کو گولڈ میڈل کے ساتھ
مزید پڑھیے


مایوس صحرائی سے ابنِ انشا تک

منگل 15 جون 2021ء
ڈاکٹر اشفاق احمد ورک
کسے خبر تھی کہ لدھیانہ کی تحصیل پھلور کے ایک چھوٹے سے گاؤں تھلہ کے ایک ماتڑ سے کھوکھر راجپوت گھرانے میں پندرہ جون 1927ء کو ہیرے خاں کے چھوٹے بیٹے اور لبھو خاں کے چھوٹے بھائی منشی خاں کے ہاں پہلوٹی کے بیٹے کے طور پر جنم لینے والاشیر محمد بکریاں چراتا، تھلہ، اپرہ اور لدھیانہ کے معمولی معمولی سکولوں میں دھکے کھاتا، چھوٹی موٹی ملازمتوں سے زندگی کرنے کی سبیل ڈھونڈتا، ایک دن اُردو مزاح کے آنگن، اداس شاعری کے آسمان اور ادبی صحافت کے ماتھے پہ ابنِ انشا بن کے چمکے گا۔مَیں نے کسی زمانے میں ان
مزید پڑھیے


وزیرِ اعظم اور اُردو

پیر 14 جون 2021ء
ڈاکٹر اشفاق احمد ورک
یہ امر نہایت خوش کُن ہے کہ پاکستان کے وزیرِ اعظم جناب عمران خان نے اپنے متعلقین و مصاحبین کو ہدایت جاری کر دی ہے کہ ان سے متعلقہ ہر طرح کی سرکاری تقاریب میں پاکستان کی قومی زبان اُردو کو پہلی ترجیح کے طور پر استعمال میں لایا جائے۔ اس میں مسرت کا پہلو یہ ہے کہ یہ اعلان کسی گوالمنڈی یا نواب شاہ مارکہ کمپلیکس کا نتیجہ نہیں بلکہ انگریزوں سے اچھی انگریزی بولنے والے ایک ایچی سونین اور کیمبرج پلٹ محبِ وطن کے دل کی پکار ہے۔ ہمارے دل میں تو وہ لمحہ آج بھی فخر بن
مزید پڑھیے


مزید ادبی لطیفے

منگل 08 جون 2021ء
ڈاکٹر اشفاق احمد ورک
ایک زمانہ تھا جب الیکٹرانک میڈیا پہ صرف پی ٹی وی کی حکمرانی تھی۔ ٹی وی سکرین پہ جلوہ گر ہونا بہت خاص بات سمجھی جاتی تھی۔ شہرت پسند شاعر ادیب تو اس کے لیے مرے جا رہے ہوتے۔ وہ کسی پروڈیوسر کو رام کرنے کے لیے خدمت و خوشامد کا کوئی موقع ہاتھ سے نہ جانے دیتے۔ ایسے ہی کسی شاعر کو ہمارے ایک دوست نے پی ٹی وی کنٹین سے ایک پروڈیوسر کے کمرے کی طرف اس حالت میں جاتے دیکھا کہ اس کے ایک ہاتھ میں تام چینی والی پیلی پڑتی چائے دانی تھی اور دوسرے
مزید پڑھیے








اہم خبریں