بشریٰ رحمان

آ۔ لوٹ کے آ جا___ مہاتیر‘ تجھے تیرے لوگ بلاتے ہیں!

بدھ 16 مئی 2018ء
ایسا ہوتا ہے جانا اور پھر ایسا ہوتا ہے آنا___ اسے کہتے ہیں ’’کسب کمال کن کہ عزیز جہاں شوی‘‘ 92 سال کے مہاتیر محمد کو اس کے عوام نے بزور بلا لیا۔ وہ ان کی ضرورت بن گیا۔ ان کا نجات دہندہ بن گیا۔ مہاتیر محمد نے ۲۲ سال ملائیشیا پر حکومت کی۔ اور ملائیشیا کو دُنیا کے بڑے اور ترقی پذیر ملکوں میں شامل کر دیا۔ کوالالمپور کے ائیرپورٹ پر اترتے ہی اس بات کا احساس شدت سے ہوتا تھا کہ یہ مسلمانوں کا بہت بڑا ملک ہے___ گو اس کے اندر مختلف بودوباش کے جزائر ہیں۔ مگر ارتقا کے
مزید پڑھیے


گیارہ نکات اور اٹھارویں ترمیم؟ (3)

بدھ 09 مئی 2018ء

ہم نے عمران خان کے گیارہ نکات سے بہت پہلے اٹھارویں ترمیم کے حوالے سے کچھ سوالات اٹھانے شروع کر دئیے تھے۔ ہمیں خوشی ہے کہ عمران خان نے یکساں نصاب اور سیاحت کو اپنے ایجنڈے میں شامل کیا۔ ہمارے ملک میں سیاحت میں کوئی پیش رفت نہیں ہوئی جس طرح انڈیا میں ہوئی ہے۔ نہ ہمارے سفارتکاروں نے پاکستان کے امیج کو بہتر بنانے کے لئے دوسرے ممالک میں تقریبات اور تعلیمات عام کی ہیں۔ اسلئے کہ سفیرانِ کرام بھی اقرباء پروری کے تحت مقرر کئے جاتے ہیں۔ اسمبلیوں سے باہر جن کو نوازنا چاہا‘ سفیر بنا دیا۔ چاہے
مزید پڑھیے


تعلیم‘ سیاحت‘ ثقافت‘ بہبودآبادی اور 18ویں ترمیم؟ (۲)

بدھ 02 مئی 2018ء

اگر تعلیم صوبوں کی تحویل میں دے دی گئی تھی تو خدا کے واسطے صوبوں سے گذشتہ پانچ دس سالوں کی کارکردگی کی رپورٹ تو مانگیے..... کیا سارے صوبوں کے سارے شہروں اور دیہاتوں کے پرائمری سکولوں کا سروے کر کے ان کے اندر بہتری کی صورت پیدا کی گئی۔ نصاب کا جائزہ لیا گیا۔ عمارتیں ٹھیک کی گئیں۔ پینے کے پانی کا بندوبست ہوا۔ لیٹرین بنائے گئے۔ گھوسٹ سکولوں کا قلع قمع ہوا۔ لڑکیوں کے لئے نئے سکول بنائے گئے۔ یہ تو صرف پرائمری کی بات ہے۔ مڈل اور میٹرک تک کے سکولوں میں کیا بہتری آئی۔ کتنے نئے
مزید پڑھیے