عارف نظامی

کھلونا ٹوٹا تو… ؟

پیر 21 مئی 2018ء
لگتا ہے کہ مسلم لیگ (ن) کے قائد اور در حقیقت سربراہ میاں نواز شریف اپنی نااہلی کے بعد جارحانہ حکمت عملی پر تو کاربند تھے ہی لیکن اب وہ سیاسی خود کشی کے راستے پر گامزن ہیں۔ نان سٹیٹ ایکٹرز والے اپنے حالیہ تباہ کن انٹرویو کے بعد میاں صاحب کے کسی مخالف کو کچھ کرنے کی ضرورت ہی نہیں، خود حکمران جماعت کے اندر سے ایسی آوازیں اٹھ رہی ہیں جو میاںنوازشریف کی اس روش پر سخت ناپسندید گی کا اظہارکر رہی ہیں ۔لہٰذا یہ حقیقی خطرہ موجود ہے کہ پارٹی کو بہت سے لوگ خیر باد کہہ
مزید پڑھیے


غداری کی فیکٹریاں؟

هفته 19 مئی 2018ء
عین جب حکمران جماعت مسلم لیگ(ن) اپنی آئینی مدت پوری کر رہی ہے ۔پا رٹی کے قائد اورنا اہل وزیر اعظم میاں نوازشریف نے سو چے سمجھے بیان کے ذریعے ایسا ارتعاش پیداکر دیا ہے جس کے نتیجے میں سیاسی اور عسکری حلقوں میںہیجا نی کیفیت پیدا ہو گئی۔ میاںنواز شریف نے حال ہی میں ’ڈان‘ کے معروف کالم نگار سرل المیڈاجو رپورٹربھی نہیں ہیں کواپنے دورہ ملتان کے دوران خصوصی طورپر بلایا اور ایئرپورٹ پر داخلے کے لیے وزارت داخلہ سے خصوصی اجازت نامہ دلوا کر ایک طے شدہ منصوبے کے تحت انٹرویو دیا۔ جی ہاں!یہ وہی سر ل
مزید پڑھیے


احتساب کے نام پر انتقام نہ ہو۔۔۔۔

پیر 14 مئی 2018ء
نیب کے چیئرمین جسٹس (ر) جاوید اقبال نے واقعی ایک بہت بڑا چھکا مارنے کی کوشش کی جس کے نتیجے میں اخلاقی طور پر وہ کلین بولڈ ہو گئے ہیں۔ میاں نوازشریف پر یہ الزام کہ انھوں نے اپنے دور حکومت میں4.7ارب ڈالر کی منی لانڈرنگ کی اور اس پر مستزادیہ کہ بھاری رقم بھارت بھجوائی جس کے نتیجے میں بھارت کے زرمبادلہ کے ذخائر بلند جبکہ پاکستان کے کم ہو گئے ۔یہ ’’انکشاف ‘‘ اسلام آباد کے ایک غیر معروف اخبار کے کالم نگار نے فروری میں ورلڈ بینک کی مبینہ رپورٹ کے حوالے سے کیا تھا ۔اب قریباً
مزید پڑھیے


حقیقت سے زیادہ سٹنٹ!

هفته 12 مئی 2018ء
ابھی تک جنو بی پنجاب مجوزہ صوبہ حقیقت سے زیادہ سٹنٹ لگتا ہے جس کا نعرہ لگا کرمرغ بادآموز سیاستدان عموماً عام انتخابات سے عین قبل اپنے مخصوص مفادات کی آبیاری کی خاطر سیاسی وفا داریاں بدلنے کے لیے استعمال کرتے رہے ہیں۔ اس کا مطلب یہ نہیں کہ انتظامی بنیادوں پر جنوبی پنجاب صوبے کا مطالبہ جائز نہیں ہے لیکن یہ نعرہ لگا نے والوں میں سے شاید ہی کوئی سیاستدان مخلص ہو، ستم ظریفی یہ ہے کچھ شخصیات کو چھو ڑ کر پنجاب سے تعلق رکھنے والے اکثر جاگیرداروں اور خانوادوں کو عمومی طور پر موقع پرست سمجھا
مزید پڑھیے


احسن اقبال پر حملہ سب کیلئے لمحہ فکریہ

بدھ 09 مئی 2018ء

وزیر داخلہ احسن اقبال پر قاتلانہ حملے نے کئی سوالات کو جنم دیدیا ہے ۔سب سے پہلے تو وزیر داخلہ پر کئے گئے بزدلانہ حملے کی ٹائمنگ ہے ۔عام انتخابات کے متوقع اعلان سے عین چند ہفتے قبل اس قسم کی سفاکانہ واردات الیکشن کے پرامن انعقاد کے لیے کوئی نیک شگون نہیں ہے ۔شاید متوقع خطرے کو بھانپتے ہوئے صدر پاکستان ،آرمی چیف اور وزیراعظم کے علاوہ تمام سیاسی جماعتوں کے سربراہوں نے اس افسوسناک واقعہ کی دو ٹوک الفاظ میں مذمت کی ہے۔ یقینا انھیں یہ نظر آ رہا ہے کہ اس ماحول میں اس وقت جاری انتخابی
مزید پڑھیے


مینوں کی لوڑ اے؟

پیر 07 مئی 2018ء

جوں جوں میاں نواز شریف کے خلاف نیب کیسز کے فیصلے کا وقت قریب آتا جا رہا ہے ان کے لہجے میں تلخی بڑھتی جا رہی ہے۔انہوں نے خود کہا ہے ،’’ہو سکتا ہے انہیں سزا ہو جائے‘‘۔ انہوں نے اپنے ساتھیوں کو تلقین کی ہے کہ اگرچہ وہ اس وقت مشکلات میں گھرے ہوئے ہیں لیکن وہ اپنے حوصلے بلند رکھیں۔میاں صاحب کو خدشہ ہے کہ انہیں مزید مقدمات میں پھنسایا جائے گا تاہم انہوں نے واضح کر دیا ہے کہ وہ ایسے ہتھکنڈوں سے گھبرانے والے نہیں ۔میاں صاحب سیاسی طور پر اورلندن میں صاحب فراش اپنی اہلیہ
مزید پڑھیے


بلاول کی انتخابی مہم

هفته 05 مئی 2018ء

بلاول بھٹو زرداری بھی میدان میں اتر آئے ہیں،انہوں نے اپنی سیاسی مہم کا آغاز کرتے ہوئے کراچی میں لیاقت آباد کی گراؤنڈ میںخطاب کیا چونکہ عروس البلاد کراچی حالیہ دہائیوں میں ایم کیو ایم کا گڑھ بن چکا تھا اور پیپلز پارٹی سمیت دیگر جماعتیں فارغ ہو گئی تھیں لہٰذا یہ فطری بات تھی کہ پیپلزپارٹی کے چیئرپرسن نے توپوں کا رخ بھی کراچی کے مہاجرووٹوں کے حصہ داروں کی طرف رکھا۔ بلاول بھٹو کا جلسہ کیوں کہ زیادہ تر کراچی کی سیاست تک محدود تھا لہٰذا اس کا عمران خان کے لاہور کے جلسے سے موازنہ نہیں کیا
مزید پڑھیے


عمران کے 11 نکات…عملی جامہ؟

بدھ 02 مئی 2018ء

تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان اتوار کو لاہور میں اپنے تاریخی جلسے میں بالآخر شریفوں اور زرداری کی مبینہ کرپشن کی گردان سے باہر نکل آئے۔ انہوں نے اپنے خطاب میں 11 نکات پر مشتمل پروگرام کا بھی اعلان کر دیا،شاید یہی ان کا انتخابی منشور ہو گا۔انہوں نے اپنے ایجنڈے جس کا مقصد پاکستان سے کرپشن کا خاتمہ،خود انحصاری،تعلیم اور صحت کی سہولتوں کی فراہمی ہے کو اپنی پارٹی کی اولین ترجیح قرار دیا۔اگرچہ انہوں نے اپنے مخالفین کی پالیسیوں اور مبینہ کرپشن پر تنقید کے تیر برسائے لیکن ان کا بنیادی نکتہ یہی تھا کہ جو قوم
مزید پڑھیے


خواجہ آصف بھی

پیر 30 اپریل 2018ء

پاکستان تحریک انصاف خواجہ آصف کی تاحیات نا اہلی پر جشن منا رہی ہے۔ مٹھائیاں بانٹی جا رہی ہیں اور کہیں بھنگڑے ڈالے جا رہے ہیں ۔ 2013کے انتخابات میں خواجہ آصف سے شکست کھانے والے پی ٹی آئی کے امیدوار عثمان ڈار جنہوں نے ان کے خلاف نا اہلی کی پٹیشن دائر کی پھولے نہیں سما رہے وہ اتنے خوش ہیں کہ فیصلے کے فوری بعد میڈیا کو سریے کا ٹکڑا دکھایا جو ان کے بقول سابق سٹیل میگنٹ میاں نوازشریف نے ان کی گردن میں ڈالا ہوا تھا اور اب اسلام آباد ہائیکورٹ نے نکال دیا ہے ۔
مزید پڑھیے


علامہؒ اور قائدؒ کا وژن!

اتوار 29 اپریل 2018ء

برخورداربلاول بھٹو زرداری نے سیا ست میں اپنی نوزائیدگی کے باوجود بڑی سیاسی پختگی کا ثبوت دیتے ہوئے اداروں کے درمیان بڑھتے تصادم پر تشویش کا اظہار کیا ہے ۔واقعی پیپلزپارٹی واحد بڑی سیاسی جماعت ہے جواس حساس معاملے میں متانت کا ثبوت دے رہی ہے۔گزشتہ روز وزیر داخلہ احسن اقبال کے منہ سے غصے میںقریباً جھاگ نکل رہی تھی ،وہ لاہور کالج فارویمن یونیورسٹی کی وائس چانسلر ڈاکٹر عظمیٰ قریشی کی برطرفی کے حوالے سے چیف جسٹس آف پاکستان کے ان ریما رکس کہ خاتون پروفیسران کی سفارش پر تعینات ہوئی تھیں ،پر سخت برہم تھے۔ انھوں نے چیف
مزید پڑھیے