ڈاکٹر حسین پراچہ

رمضان اور سیاسی پت جھڑ

هفته 19 مئی 2018ء
میاں نوازشریف نے کہا ہے کہ پاکستان دنیا میں تنہا ہو گیا ہے۔ یہ تو وقت ہی بتائے گا کہ پاکستان تنہا ہوا یا نہیں مگر میاں صاحب بالکل تنہا ہو چکے ہیں۔ انسان کب تنہا ہوتا ہے؟ اس پر بھی بات ہوگی مگر پہلے کچھ شان رمضان کا تذکرہ ہو جائے۔ قدرت اللہ شہاب نے اپنی کتاب شہاب نامہ میں شان رمضان کا ایک حیران کن واقعہ لکھا ہے۔ وہ لکھتے ہیں کہ میں ہالینڈ میں سفیر پاکستان تھا۔ ایک روز چھٹی کے دن ہم ہالینڈ کے خوبصورت جنگلوں میں لانگ ڈرائیو پر نکلے۔ درختوں کے بیچوں بیچ چھوٹی
مزید پڑھیے


طیب اردوان :امت مسلمہ تمہیں سلام پیش کرتی ہے

جمعرات 17 مئی 2018ء
پیغمبروں کی سرزمین فلسطین کا دل یروشلم ہے جہاں مسجد اقصیٰ واقع ہے۔ یروشلم یا القدس کی بستی مسلمانوں کے تاریخی جاہ و جلال کی امین ہے اسی القدس میں امریکہ نے اپنا سفارت خانہ منتقل کرنے کا دسمبر میں اعلان کیا تو فلسطینیوں نے واضح کر دیا کہ یہ ریڈ لائن ہے جسے امریکہ اسرائیلی خوشنودی کے لیے عبور نہ کرے۔ امریکہ نے 14مئی کو یہ ریڈ لائن عبور کر لی۔ اس پر غزہ کے غیور اور بہادر فلسطینیوں نے شدید مگر مکمل طور پر پرامن اور غیر مسلح احتجاج کیا۔ غزہ اور اسرائیلی سرحد پر ہونے والا یہ
مزید پڑھیے


میاں نوازشریف: آتش انتقام ملک دشمنی تک جا پہنچی

منگل 15 مئی 2018ء
انتقام کی اس آگ سے اللہ کی پناہ مانگنی چاہیے جو انسان کی آنکھوں پر پٹی باندھ دے اور عقل پر تالے ڈال دے۔ میں کبھی یہ سوچ بھی نہ سکتا تھا کہ آتش انتقام میاں نوازشریف کو کھلی کھلی ملک دشمنی تک پہنچا دے گی۔ علامہ اقبال کے ایک مصرعے میں تھوڑے سے تصرف کے ساتھ یہی نتیجہ نکلتا ہے کہ مجھے بتا تو سہی اور ’’غداری‘‘ کیا ہے؟ چاہیے تو یہ تھا کہ تین دہائیوں سے سیاست و اقتدار دونوں کے ساتھ وابستہ رہنے والے میاں نوازشریف دنیا کی توجہ کشمیر میں انسانیت سوز قتل و غارت گری اور بھارتی
مزید پڑھیے


حیران کن واپسی

هفته 12 مئی 2018ء
واپسی کسی ’’بے وفا‘‘ کی ہو یا کسی یارِ طرحدار کی ہو یا کسی سچے قومی رہنما کی ہو، اس میں بڑی کشش ہوتی ہے۔ گزشتہ دو تین ہفتوں سے کوالالمپور میں مقیم ایک پاکستانی دوست کی جو تقریباً ملائی ہو چکا ہے۔ مجھے بار بار توجہ دلا رہا تھا کہ حضور! کنویں کے مینڈک نہ بن کر رہ جائیں کبھی کنویں سے باہر نکل کر بھی اپنے گردوپیش کا جائزہ لیں۔ یہاں ملائیشیا میں ایک حیران کن تاریخ رقم ہو رہی ہے اور چپکے چپکے ہو رہی ہے۔ اس پاکستانی دوست کی ایک بیگم ملائشین بھی ہے۔ لہٰذا وہ
مزید پڑھیے


راغب حسین: مجھے تو حیران کر گیا وہ

جمعرات 10 مئی 2018ء

نوجوان ارب پتی پاکستانی امریکن راغب حسین سے میری ملاقات مکاتب خانہ شاہی قلعہ لاہور میں ہوئی۔ ان کی دلچسپ اور حیران کن داستان حیات کا پہلا باب ان کی زبانی سنیے۔ ’’میں کراچی کے ایک نیم متوسط بلکہ غریب گھرانے میں پیدا ہوا اور وہیں پلا بڑھا۔ میرا بچپن کھلونوں سے ناآشنا تھا۔ گھر میں عیش و عشرت تو دور کی بات ہم زندگی کی تمام راحتوں سے بھی آگاہ نہ تھے۔ والدین اور بارہ بہن بھائیوں کا یہ کنبہ صرف تین چھوٹے چھوٹے کمروں میں زندگی بسر کر رہا تھا۔ تنگدستی اور عسرت کا سماں تھا مگر ہم
مزید پڑھیے


گالی اور گولی کی سیاست

منگل 08 مئی 2018ء

زندگی اور موت کے فیصلے زمینوں پرنہیں آسمانوں پر ہوتے ہیں۔ اس اللہ کا شکر ہے جس نے احسن اقبال کو پہلی زندگی دی تھی اور اسی نے اپنے بندے کو دوسری زندگی بھی عطا کی ہے۔ برادر عزیز احسن اقبال سے پرانی یاداللہ ہے۔ ایک نہی کئی حوالوں سے ان کے ساتھ گہرا تعلق خاطر ہے۔ ان پر قاتلانہ حملہ میرے لیے ایک ذاتی صدمہ بھی ہے۔ سبب کچھ بھی ہو ایسا حملہ قابل مذمت ہے۔ گزشتہ کئی ماہ سے وطن عزیز میں سیاست دشنام طرازی اور الزام تراشی کا کھیل بن چکی ہے۔ گالی سے شروع ہونے والی
مزید پڑھیے


دیوانگی کی اداکاری

هفته 05 مئی 2018ء

مرحوم شورش کاشمیری کہا کرتے تھے کہ شرفا کے سینے رازوں کے دفینے ہوتے ہیں مگر آج کے شرفا کے سینے ’’سلگتے ہوئے رازوں‘‘ کے انگارے ہیں۔ میاں نوازشریف روز دھمکی دیتے ہیں کہ سدھر جائو ورنہ میں سب کچھ طشت ازبام کردوں گا۔ جو آدمی کئی دہائیوں سے اتنے اہم مراتب و مناصب پر فائز رہا یقینا اس کے پاس وہ معلومات ہوں گی جو میرے اور آپ کے پاس نہیں۔ ویسے میاں صاحب اور ان کے نئے نورتنوں کی مہربانی سے اس ملک میں اب کوئی راز، راز نہیں۔ میاں صاحب کی اس وقت جو حالت ہے اسے
مزید پڑھیے


وہ تعریف جسے مؤخر نہیں کیا جا سکتا

جمعرات 03 مئی 2018ء

آج ایک نہیں کئی موضوعات میرے قلم کو لبھانے اور میرے دل کے تاروں کو چھیڑنے والے تھے بقول ڈاکٹر خورشید رضوی ؎ کوئی اس طرح دم بدم لبھائے مجھے کہ ہارنے بھی نہ دے اور آزمائے مجھے یہاں ایک نہیں لبھانے والے کئی عنوانات ہیں۔ سوچا اس کشمکش میں اپنے قارئین کو بھی شامل کروں۔ میرے دامن دل کو اپنی طرف کھینچنے والی پہلی خبر یہ ہے کہ مقبوضہ کشمیر کے علاقے ڈوڈہ کی ایک گیارہ بارہ سالہ بچی کلثوم بانو نے ایک مضمون انگریزی میں لکھا اور ہیری پاٹر سیریز کی مصنفہ Ms J.K Rowlingکو اپنی پسندیدہ رائٹر
مزید پڑھیے


جلسوں کی بہار اور دونہیں ایک پاکستان

منگل 01 مئی 2018ء

مولانا رومی نے انسان کو رفعتِ پرواز کا سبق یاد دلاتے ہوئے بڑی خوب صورت بات فرمائی تھی۔ ’’اللہ نے تمہیں پروں کے ساتھ پیدا کیا تھا مگر تم ساری زندگی رینگتے کیوں رہتے ہو؟‘‘ عمران خان نے شب رفتہ اپنی طویل تقریر کا اختتام رومی کے اس حیات آفریں قول پر کیا تھا۔ یہ قول عمران خان کی دو گھنٹے طویل تقریر کے ماتھے کا جھومر تھا اس کے ساتھ ہی خان نے آخر میں نوجوانوں کو ایک نصیحت کی جسے میں ان کے گیارہ نکات پر بھاری سمجھتا ہوں انہوں نے کہا کہ ہمیشہ بڑے بڑے خواب دیکھو،
مزید پڑھیے


آسمانِ سیاست: طلوع و غروب

هفته 28 اپریل 2018ء
زمینی فیصلے بھی آ رہے ہیں مگر آسمانی فیصلہ بھی کان لگا کرسنئے ’’یہ دن ہیں جنہیں ہم لوگوں کے درمیان گردش دیتے رہتے ہیں۔‘‘ یہ حقیقت آنکھوں کے سامنے رہے تو انسان اپنے آپ میں رہتا ہے، وہ یہ سمجھ لے کہ دائمی بادشاہی تو خالق دوجہاں کی ہے باقی ہر شے آنی جانی ہے تو بڑی آسانی ہو جاتی ہے مگر دولت و شہرت کا نشہ حکمرانوں کی آنکھوں پر ہی نہیں ان کی عقل پر بھی پردہ ڈال دیتا ہے اور وہ سمجھنے لگتے ہیں کہ سدا بادشاہی انہی کی ہے۔ ایسا اب صرف تیسری دنیا خاص طور
مزید پڑھیے