فیصل آباد (اے پی پی)اردو ادب کے مایہ ناز شاعر ، شگفتہ نثر نگار ابن انشاء جو 15جون 1927ء کو پیدا ہو کر 50برس کی عمر میں 11جنوری 1978ء کو اس دار فانی سے کوچ کر گئے تھے کی 41ویں برسی جمعہ کو ملک بھر میں عقیدت و احترام سے منائی گئی ۔ ابن انشاء نے یوں تو بے شمار غزلیں تحریر کیں لیکن انہیں سب سے زیادہ شہرت پی ٹی وی کے پروگرام سخن ور کیلئے ریکارڈ کروائی گئی غزل " انشاء جی اٹھو اب کوچ کرو اس شہر میں جی کو لگانا کیا" سے ملی۔انہوں نے چاند نظر ، اس بستی کے اس کوچے میں اور دل وحشی سمیت کئی مجموعہ کلام لکھے جبکہ نثری تحریروں میں چلتے ہو تو چین چلیے ، آوارہ گرد کی ڈائری ، اردو کی آخری کتاب، دنیا گول ہے ،ابن بطوطہ کے تعاقب اور غمار گندم بھی قابل ذکر ہیں۔ مرحوم کی برسی کے موقع پر مختلف تقریبات میں ان کی اردو کیلئے شاندار خدمات کو مثالی الفاظ میں خراج عقیدت بھی پیش کیا گیا۔