لاہور (رانا محمد عظیم ) مودی کی کشمیری مسلمانوں کیخلاف گھنائونی سازش بے نقاب ہوگئی، تین لاکھ پچاس ہزار جنونی ہندو مسلمانوں کے قتل عام، گھر اور مساجد جلانے کیلئے مقبوضہ کشمیر بھیج دیئے گئے ۔ جنونی ہندوئوں کو سترہ فوجی چوکیوں میں قیا م کرایا گیا ہے ۔جنونی ہندوئوں کی مقبوضہ کشمیر میں قتل و غارت کرنے کی سازش خود بھارتی فوج کے سکھ افسران نے بے نقاب کر دی۔ تیرہ سکھ افسران جنونی ہندووئں کو وہاں بلانے اور ان کو فوج کی وردیاں پہنا کر مسلمانوں کے قتل عام کرنے کے حکومتی فیصلہ پر احتجاجاََ استعفے دے گئے ۔ یہ جنونی ہندو رام ارجن ،آ کاش ملہوترا،آ دش ورما، روی شنکر کی سربراہی میں کام کر رہے ہیں اور ان کو خصوصی طور پر ٹاسک دیا گیا ہے کہ یہ مقبوضہ کشمیر میں 300 سے زائد مندر بنائیں گے اور وہاں مسلمانوں کا قتل عام کریں گے ، مساجد اور معروف درگاہوں کو جلائیں گے ۔ ذرائع کا کہنا ہے ان ہندو انتہا پسندوں کی باقاعدہ ٹریننگ اور ان کو پٹرول بم اور دیگر چیزیں بنانے کی ٹریننگ موساد کی ٹیم نے دی ہے ۔ بھارتی فوج میں سکھ فوجی افسران کو اس سازش کا علم ہوا تو ان میں سے تیرہ سکھ افسران نے احتجاجاََ کام کرنے سے انکار کر دیا جن میں بریگیڈئیر اروندر سنگھ، بریگیڈئیر رنجیت سنگھ اروڑہ ، کرنل آ گیا پال ، کرنل سورن سنگھ ، میجر ہرپال سنگھ و دیگر شامل ہیں، احتجاجاَ کشمیر سے واپس چلے گئے جس پر بھارتی فوج کے ہندو افسران نے ان کیخلاف فوجی ایکٹ کے تحت کارروائی شروع کر دی ہے ۔ دو کشمیر ی اخبارات نے بھی اس گھنائونی سازش پر لکھا تو ان اخبارات کو بھارتی فوجیوں نے بند کرا دیا۔ ذرائع کے مطابق ابتک تین آبادیوں میں ان کے ذریعے قتل و غارت اور مساجد کو نذر آ تش کیا جا چکا ہے ۔ ذرائع کے مطابق بھارتی انتہا پسند آ ر ایس ایس باقاعدہ اپنے اجلاسوں میں بھی اس کا ذکر کر رہی ہے ۔ لاہور(جوادآراعوان)بھارت نے لائن آف کنٹرول کے چھ سے زائد ایریاز میں فالس فلیگ آپریشن لانچ کرنے کی تیاری کر لی جس کے کور میں پاکستان سے محدود جنگ چھیڑی جائے گی اور کشمیریوں کی بے دریغ قتل و غارت کی جائے گی۔اعلی حکومتی عہدیدران نے ٹاپ سیکورٹی آفیشلزکاحوالہ دیتے ہوئے روزنامہ 92نیوز کو بتایا ہے کہ فیلڈ انٹیلی جنس رپورٹس سے پتہ چلا ہے کہ بھارتی فورسز نے مقبوضہ وادی میں کشمیریوں کی باقاعدہ نسل کشی مہم شروع کردی ہے ۔ انہوں نے بتایا کہ بین الااقوامی میڈیا کو مقبوضہ وادی کے سلیکٹڈ تیس فیصد ایریاز میں سخت چیک کے نیچے مومنٹ کی اجازت دی جا رہی ہے ۔بین الااقوامی میڈیا کو فالس فلیگ آپریشنز کے ذریعے یہ تاثر دینے کی کوشش کی جائے گی کہ لائن آف کنٹرول سے فائٹرز مقبوضہ کشمیر داخل کئے جا رہے ہیں جس کو روکنے کیلئے انہیں پاکستان کے ساتھ محدود جنگ چھیڑنا پڑی۔انہوں نے بتایا کہ بھارتی فوج کی 15ویں کور جو مقبوضہ کشمیر اور کنٹرول لائن کے معاملات دیکھتی ہے اسکے ہیڈ کوارٹرز سری نگر میں اسرائیل کے ملٹری اور انٹیلی جنس سروسز ایڈوائزرزنے 15ویں کور کے کمانڈر لیفٹیننٹ جنرل کنول جیت سنگھ ڈھلوں اور مقبوضہ کشمیر میں را کے سٹیشن چیف ،بھارتی ایم آئی نارتھ کے کمانڈر اور آئی بی کے انچارج سے ملاقاتیں کیں ۔نیو دہلی میں اسرائیل کے سفارتخانے میں ڈپلومیٹک کور میں آپریٹ کرنے والے موساد کے کرنل اور اسرائیلی ملٹری انٹیلی جنس امل کے کرنل رینک کے افسران نے تل ابیب سے بھارت آنے والی سپیشل ملٹری اور انٹیلی جنس ایڈوائزرز کی ٹیم کیساتھ 15ویں کور میں ملاقاتیں کی ہیں۔