وفاقی وزیر خزانہ سینیٹر محمد اورنگ زیب نے اسلام آباد میں چیئرمین ڈیلیوری ایسوسی ایٹس سر مائیکل باربر سے ملاقات میں گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ حکومت ٹیکس اور توانائی کے شعبوں میں اصلاحات و ریاستی، ملکیتی اداروں کی تنظیم نو اور پائیدار نمو و برآمدات میں اضافے کے اقدامات کر رہی ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ ایف بی آر کی ڈیجیٹلائزیشن حکومت کی اولین ترجیح ہے۔ اس میں شبہ نہیں کہ ملکی معاشی استحکام، توانائی میں اضافہ اور ٹیکس نیٹ کو وسیع کرنے کیلئے ہمہ جہت اقدامات کی ضرورت ہے۔ کئی ادارے جدید نیٹ ورک سے محروم ہیں۔ اداروں کی ڈیجیٹلائزیشن وقت کی ضرورت ہے اور اندرونی و بیرونی رابطوں تجارت، صنعت اور کئی دیگر شعبوں کی ترقی جدید ذرائع اور ٹیکنالوجی کو کام لائے بغیر نہیں ہو سکتی۔ برآمدات میں اضافہ اور پائیدار نمو بھی اس وقت ممکن ہے جب تمام ریاستی اداروں کی تنظیم نو کیساتھ ساتھ خدمات میں بہتری لائی جائے، نئی سرمایہ کاری کے لئے ترغیبات دی جائیں ، خصوصاََ چھوٹے سر مایہ کاروں کیلئے سہولتیں پیدا کی جائیں، عوام دوست معاشی پالیسیاں بنائی جائیں اورپیداواری صلاحیت میں اضافہ کیلئے اداروں کی ڈیجیٹلائزیشن کے عمل کو تیز کیا جائے۔ لہٰذا ضرورت اس امر کی ہے کہ مقامی اقتصادی منصوبوں پر خصوصی توجہ دی جائے اور ایف بی آر سمیت تمام اداروں کے اصلاحاتی عمل کو تیز کیا جائے، بد عنوانی کا خاتمہ کیا جائے تا کہ ٹیکس نیٹ میں اضافے کیساتھ مختلف شعبوں کی ترقی اور پیداوار میں اضافہ کیا جا سکے۔