اسلام آباد(سپیشل رپورٹر ، مانیٹرنگ ڈیسک، نیوزایجنسیاں ) وزیراعظم عمران خان نے اسلام آبادمیں نیاپاکستان ہاؤسنگ پراجیکٹ کا سنگ بنیاد رکھ دیا۔اسلام آباد کے زون 4میں منصوبے کا سنگ بنیاد رکھنے کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم نے کہاگھروں کی سکیم پورے پاکستان میں لے کر جائیں گے ،حکومت کے پاس50لاکھ گھر بنانے کیلیے پیسہ نہیں ہے ،پرائیویٹ سیکٹر کیساتھ ملکر گھر بنائیں گے ۔زون 4ساڑھے 18ہزارگھروں کا منصوبہ ہے ،حکومت منصوبے کیلئے اراضی فراہم کرے گی،ڈیڑھ سال کے اندرگھرفراہم کردینگے ۔ساڑھے 18 ہزار مکانات میں سے 10ہزار گھر صرف اس طبقے کیلئے ہیں جو اپنا گھرنہیں خرید سکتے ۔قرعہ اندازی کی جائے گی اور جس کا نام نکلے گا اسے گھر دیں گے ۔کراچی میں 40فیصد لوگ کچی آبادیوں میں رہتے ہیں،جو لوگ کچی آبادیوں میں رہ رہے ہیں ان کو اپنا گھر دیں گے ،بڑے شہروں میں کچی آبادیوں کیلئے بھی سکیم شروع کررہے ہیں۔اسلام آبادمیں 2سیکٹر جہاں کچی آبادیاں ہیں وہاں ہاؤسنگ سکیم شروع کررہے ہیں۔برطانیہ میں لوگ بنکوں سے قرضے لے کر گھربناتے ہیں،پاکستان میں غریب اسلئے گھرنہیں بنا سکتے کہ بینک قرضے نہیں دیتے ،قانون بھی نیالے کرآرہے ہیں ،آسانیاں پیدا کر رہے ہیں تاکہ لوگ بینک سے قرض لیکرگھر بناسکیں،سکیم کے تحت گھر کی قیمت عام آدمی کی پہنچ میں ہوگی ،میراخواب ہے کہ جو اپناگھر بنانے کاسوچ بھی نہیں سکتے ان کو گھر بنانے کاموقع ملے ،تنخواہ دارطبقہ بھی سکیم کے تحت گھربناسکے گا۔ نیا پاکستان ہائوسنگ سکیم کیلئے بیرون ملک سرمایہ کار پاکستان میں آکر سرمایہ کرنا چاہتے ہیں ۔ ہم ان سرمایہ کاروں کو سرمایہ کاری کے بہترین مواقع میسر کریں گے ۔ وزیراعظم سے پاک فضائیہ کے سربراہ ایئر چیف مارشل مجاہد انور نے وزیراعظم آفس میں ملاقات کی۔ وزیر اعظم آفس سے جاری بیان کے مطابق ملاقات کے دوران پاک فضائیہ سے متعلق پیشہ وارانہ امور پر تبادلہ خیال ہوا۔ وزیراعظم سے سابق وزیر خزانہ اسد عمر نے بھی وزیراعظم آفس میں ملاقات کی۔وزیراعظم نے ہنڈی کے بجائے بینکوں کے ذریعے رقوم بھیجنے پر بیرون ملک مقیم پاکستانیوں کا شکریہ ادا کیا ہے ۔اپنے ٹویٹ میں انہوں نے کہا کہ گزشتہ برس کے مقابلے میں ترسیلات زر میں 9.7 فیصد کا اضافہ ہوا ہے اور مجموعی حجم 21.88 ارب ڈالر تک جا پہنچا ہے ۔گزشتہ برس ترسیلات میں اضافے کی شرح صرف 2.9 فیصد تھی۔