مکرمی !اسلام ایک ابدی، دائمی اور عالمگیر مذہب ہے، جس میں انسانیت کی ہر گوشہ سے رہنمائی کی گئی ہے۔ اسلام کے زیر سایہ ہر طبقہ کو پناہ ملی، اسلام نے نہ صرف انسانیت کے حقوق کا تحفظ کیا بلکہ حقوق طلبی کی راہ بھی ہموار کردی۔ اسلام سے پہلے اگر صنف نازک کے احوال دیکھیں تو شاید دیکھنے کی طاقت نہ ہو ، زمانے نے جس درجہ کا ظلم و ستم اس جنس سے روا رکھا،آسمان تلے ،زمین کے اوپر اس کی مثال ملنا ناممکن ہے۔ معاشی اور معاشرتی حقوق کی بات کیا کریں تو انسانی حقوق کی بجاآوری بھی بمشکل نظر آئی مگر اسلام نے صنف نازک کو جو حقوق عطا فرمائے اسکی کسی اور مذہب میں نظیر نہیں ملتی۔ اسلام کا آفتاب بڑی آب وتاب سے طلوع ہوا اور اس نے اپنی روشن کرنوں سے تاریکیوں کا خاتمہ کیا۔اور صرف یہی نہیں بلکہ اسلام نے اس نازک موڑ پر اس صنف نازک کی عصمت و عفت کے وہ قوانین مرتب کیے کہ اپنے تو اپنے، غیر بھی عش عش کر اٹھے۔ (آصف اقبال انصاری،کراچی)