راولپنڈی(رپورٹر92 نیوز،مانیٹرنگ ڈیسک) وفاقی وزیر داخلہ شیخ رشید احمد نے کہا ہے کہ افغان سفیر کی بیٹی کا معاملہ اغوا نہیں بلکہ پاکستان کو بدنام کرنے کی سازش ہے ۔گزشتہ روزلال حویلی میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ افغان سفیر کی بیٹی کیس میں چاروں ٹیکسیوں کے مالکان تک پہنچ گئے ۔ ان کا کوئی کرمنل ریکارڈ نہیں ۔افغان سفیر کی بیٹی کے ساتھ کسی ٹیکسی میں کوئی لڑائی جھگڑا نہیں ہوا،سفیر کی بیٹی نے تمام ٹیکسی ڈرائیورز کو ادائیگی کی، کسی ٹیکسی میں ان کے ساتھ کوئی دوسرا شخص نہیں بیٹھا۔ہم نے اسلام آباد اور راولپنڈی کی 700 سے زائد گھنٹے کی فوٹیج دیکھی، 200 سے زیادہ ٹیکسیوں کی جانچ پڑتال کرنے کے بعد ان چار ٹیکسیوں اور ان کے مالکان تک پہنچے ہیں تاہم ہمیں افسوس ہے کہ ہماری اتنی کوشش کے باوجود وہ خود یہاں سے چلی گئی ہیں البتہ ہم نے مقدمہ درج کیا اور ریاست پاکستان یہ مقدمہ لڑے گی۔یہ اغوا کا کیس نہیں بنتا، یہ معاملہ اغوا نہیں بلکہ پاکستان کو بدنام کرنے کی سازش ہے ۔ہم نے افغان سفیر کی بیٹی کے اغوا کا پرچہ دیا ، افغان سفیر کی بیٹی کا یہاں ہونا ضروری ہے اور چاہتے ہیں افغان سفیر خود بھی تحقیقات کا حصہ بنیں۔ان کا کہنا تھا کہ حکومت نے داسو میں ہونے والے واقعے کی تحقیقات مکمل کرلی ہیں اور چینی حکومت اس سے مطمئن ہے تاہم بھارت اسے نئی شکل دینے کی کوشش کر رہا ہے ، چین اور پاکستان کے درمیان غلط فہمی پیدا کرنے کی کوشش کی جا رہی ہے ۔ عالمی طاقتیں نہیں چاہتی پاکستان اور چین کے تعلقات مضبوط ہوں یا دوستی رہے ۔ پاکستان کے خلاف غیر علانیہ ہائبرڈ وار تیز کی جارہی ہے ۔انہوں نے کہا کہ عمران خان امت مسلمہ کا ابھرتا لیڈر ہے جو بھارت اسرائیل کو ایک آنکھ نہیں بھاتا۔شیخ رشید نے کہا کہ جوہرٹاؤن کا دھماکہ ایف اے ٹی ایف اجلاس سے ایک دن پہلے کیا گیا جب کہ داسو کا واقعہ جی سی سی کی میٹنگ سے پہلے اور افغان سفیرکی بیٹی کا واقعہ افغان کانفرنس سے پہلے کیا گیا۔ان کی ٹائمنگ دیکھیں، جو واقعات ہو رہے ہیں سازش کے تحت ہو رہے ہیں۔ دنیا کو تاثر دینے کی کوشش کی جا رہی ہے پاکستان میں امن و امان کا مسئلہ ہے ۔ پاکستان کے خلاف ان ڈکلیئرڈ ہائبرڈ وار شروع ہو چکی ہے اور آنے والے دنوں میں ہائبرڈ وار تیز ہوگی۔ شیخ رشید نے کہا کہ مریم نواز شریف کشمیر میں انتخابی مہم کشمیر کیلئے یا نوازشریف کی جیت کیلئے نہیں بلکہ عمران خان کے خلاف کر رہی ہے ۔وزیر اعظم عمران خان کی قیادت میں یہ ملک آگے بڑھ رہاہے ،پاکستانی افواج اور سول ادارے ہر قسم کے حالات کیلئے تیار ہیں، پاکستان کی سرزمین افغانستان کیلئے ہرگزاستعمال نہیں ہونے د ینگے ،نادرا میں جعلی شناختی کارڈ میں ملوث افراد کیخلاف مقدمات درج کرکے گرفتار کیا گیاہے ۔ انہوں نے کہا ہے کہ وزیر اعظم عمران خان نے تمام سکیورٹی اداروں کو ہدایت کی ہے کہ پاکستان میں سکیورٹی صورتحال کو دیکھا جائے ۔پاکستان کے تمام بارڈر محفوظ اور 90 فیصد باڑ لگا دی گئی ہے ۔ انہوں نے کہا مریم نواز پچھلے دسمبر سے اس حکومت کے خاتمے کا اعلان کر رہی ہیں اور کشمیر انتخابات میں شکست کھانے کے بعد اگر وہ اسلام آباد میں دھرنا دینا چاہتی ہیں تو شوق سے دیں۔ وزیر اعظم عمران خان کی قیادت میں یہ ملک آگے بڑھے گا اور جس ملک کو یہ ڈیفالٹ کرنا چاہتے تھے اس کی معیشت بہترین ہوگی۔انہوں نے کہا کہ عید کی چھٹیوں کے بعد ڈپلومیٹک انکلیوکو خاص سکیورٹی زون بنانے جا رہے ہیں۔