نیویارک (نیٹ نیوز)ایک امریکی عدالت کی جیوری نے بروکلین کے بنگلہ دیشی نژاد مہاجر عقائد اﷲ کودہشتگردی کے الزام میں مجرم قراردے دیا ۔2011 میں امریکہ آنے والے 28سالہ عقائد اﷲ جو ایک ڈرائیور ہیں پر نیویارک کے مشہور ٹائم سکوائر کے قریب داعش گروپ کے نام پر بم دھماکہ کرنے کاالزام ہے ۔11دسمبر 2017 میں ہونے والے واقعہ میں گھریلو ساختہ بم نصب کرنے سے قبل ہی پھٹ گیاتھا جس میں مجرم اور 3 دوسرے افراد زخمی ہوگئے تھے ۔بم دھماکہ سے زیادہ نقصان نہیں ہوا مگر کرسمس کے قریب ہونے کی وجہ سے سیاحوں میں خوف وہراس پھیلانے کاسبب بن گیاتھا۔ عقائد اﷲ کو جرم ثابت ہونے کے بعد5 اپریل 2019 میں سزا سنائی جائے گی جوکہ زیادہ سے زیادہ عمرقید ہوسکتی ہے ۔سی سی ٹی وی کیمروں کی مدد سے گرفتاری کے بعد عقائد اﷲ نے اعتراف کیاتھا کہ اس نے یہ کارروائی داعش کیلئے کی ہے ۔امریکی فیڈرل پراسیکیوٹر جیفری بر مین نے بتایاکہ مجرم نے بم اپنے اپارٹمنٹ میں بنایاتھا۔ مہاجر نے فیس بک پر پوسٹ میں کہاتھاکہ صدر ٹرمپ تم اپنی قوم کی حفاظت میں ناکام ہوگئے ہو۔ اس نے ایک کاغذ پر نوٹ بھی لکھاکہ تمہارے دور میں امریکہ کاخاتمہ جائے گا۔