اسلام آباد(وقائع نگار،مانیٹرنگ ڈیسک) عوام کو بڑی عید کا بڑا تحفہ مل گیا، اوگرا نے گھریلو صارفین کے علاوہ دیگر تمام کیٹیگریز کیلئے گیس کے ماہانہ بلوں میں اضافہ کر دیا،قیمتوں میں اضافے کا باقاعدہ نوٹیفکیشن بھی جاری کر دیا گیا ۔تفصیلات کے مطابق سپیشل کمرشل صارفین کا کم ازکم ماہانہ گیس بل 5880 روپے سے بڑھاکر 6415 روپے کر دیا گیا ہے ۔ آئس فیکٹریز کا گیس بل 5880 روپے سے بڑھا کر 6415 روپے ، جنرل انڈسٹریل سیکٹر کیلئے بل 26301 روپے سے بڑھا کر 36449 روپے ، پانچ زیرو ریٹڈ سیکٹرز کیلئے بل 20232 روپے سے بڑھا کر 28060 روپے ،سی این جی سیکٹر کیلئے بل 33045 سے بڑھا کر 45803 ،سیمنٹ فیکٹریوں کیلئے 32877 روپے سے بڑھا کر 47588 روپے ، پاور سٹیشنوں کیلئے 21209 روپے سے بڑھا کر 29416 روپے ، آئی پی پیز کیلئے 21209 روپے سے بڑھا کر 29416 روپے ، کیپٹو پاور پلانٹس کا بل 26301 روپے سے بڑھا کر 36449 روپے کر دیا گیا۔ دفاتر، ہسپتالوں، تعلیمی اداروں، گیسٹ ہائوسز،رہائشی کالونیوں اور خیراتی اداروں کے گیس کے کم سے کم ماہانہ بل میں کمی کر دی گئی، اس کیٹیگری کے صارفین کا ماہانہ بل کم ازکم 4680 روپے سے کم کر کے 3900 روپے ماہانہ کر دیا گیا۔ جبکہ اوگرا نے ایل این جی 57 روپے فی ایم ایم بی ٹی یو تک سستی کرنے کا نوٹیفکیشن جاری کردیا۔ سوئی ناردرن کے صارفین کیلئے قیمت 11.1 ڈالر فی ایم بی ٹی یو جبکہ سوئی سدرن کیلئے قیمت میں 54 روپے فی ایم ایم بی ٹی یو کمی کی گئی ہے ۔ لاہور( خبرنگارخصوصی) پنجاب کی ایکسپورٹ ٹیکسٹائل انڈسٹری کو گیس رعایت ختم کردی گئی ، سوئی ناردرن گیس کمپنی نے جولائی کے مکمل بل بھجوا دیئے ، بل جمع کروانے کی آخری تاریخ بارہ اگست ہے ، بل جمع نہ کرانے پر گیس کنکشن منقطع کر دیئے جائیں گے ، ٹیکسٹائل ایکسپورٹ انڈسٹری کو گیس کے رعایتی نرخ ختم کرنے پر صنعتی حلقوں نے احتجاج کیا ہے ،لاہور ملز مالکان اس ایشو پر ہڑتال پر بھی جا سکتے ہیں ، اقتصادی رابطہ کمیٹی کے گذشتہ ماہ کے اجلاس میں گیس نرخوں میں رعایت کی منظوری دی جانی تھی ، سوئی ناردرن گیس کمپنی حکام کا موقف ہے کہ حکومت کی جانب سے سبسڈی نہیں ملی جس کے باعث مکمل بل بھجوائے ،حکومت سبسڈی دے گی تواس کے بعد رعایتی بل بھجوائے جائیں گے ۔