اسلام آباد(آن لائن) چیف آف نیول سٹاف ایڈمرل ظفر محمود عباسی نے کثیرالملکی مشق امن 19 میں شریک مختلف غیر ملکی بحری جہازوں کا دورہ کیا۔ نیول چیف کی آمد پر متعلقہ جہازوں کے سینئر/ کمانڈنگ افسران نے اُن کا استقبال کیا اورجہازپر موجودچاق و چوبند دستوں نے انھیں گارڈ آف آنر پیش کیا۔نیول چیف نے آسٹریلیا، چین، اٹلی، ملیشیا، عمان،سری لنکا، ترکی اور برطانیہ کے شریک جہازوں کا دورہ کیا۔نیول چیف کو جہازوں کے عملے کی جانب سے بریفنگ بھی دی گئی ۔ نیول چیف نے کہا کہ اسٹریٹجک اہمیت کے حامل اس خطے میں پاک بحریہ ہمیشہ مشترکہ سکیورٹی کے فروغ کی کوششوں میں پیش پیش رہی ہے اور امن مشقیں بھی اسی نظر یے پر منعقد کی جاتی ہیں، یہاں بننے والے دوستانہ تعلقات مستقبل میں مزید مستحکم ہوں گے اور علاقائی امن و ترقی کے مشترکہ حدف کے حصول کیلئے ہمیں قریب لا ئینگے ۔ ایڈمرل ظفر محمود عباسی نے بین الاقوامی میڈیا نمائندگان سے ملاقات بھی کی اور اُن کے سوالوں کے جوابات دیئے ۔ چیف آف دی نیول سٹاف نے شریک جہازوں کے عملے سے غیر رسمی ملاقاتیں بھی کیں۔ کمانڈر زمبابوے نیشنل آرمی جنرل ایڈزائی ابسولم چینو کا چمونیو نے مزارقائد پر حاضری دی اور پھولوں کی چادر چڑھائی۔ اُنھوں نے جوائنٹ میری ٹائم انفارمیشن کوآرڈینیشن سینٹر، پاکستان نیول اکیڈمی اور پاکستان بحریہ کے جہاز شمشیر کا دورہ بھی کیا۔ رومانیہ کے بحری فوج کے سر براہ وائس ایڈمرل الیگزینڈر ومرسو نے پاک بحریہ کے جہاز سیف کا دورہ کیا اور وائس ایڈمرل محمد امجد خان نیازی سے ملاقات کی۔ آٹھویں بین الاقوامی میری ٹائم کانفرنس 2019 ئکے دوسرے روز کے مختلف سیشنز میں میری ٹائم سکیورٹی چیلنجز اور مواقع کا موضوع زیرِ بحث رہا۔شریک ممالک اور پاک بحریہ کے افسران اور جوانوں کے درمیان دوستانہ کھیلوں کے میچز بھی منعقد کرائے گئے ۔ افسران اور جوانوں کیلئے ایک بین الاقوامی فوڈ گالا اور ثقافتی شو بھی منعقد کیا گیا ۔ وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ مہمانِ خصوصی تھے ۔