واشنگٹن (نیٹ نیوز)امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے کہا ہے ایران کی طرف سے کسی بھی قسم کے حملے کا ہزار گنا بڑا جواب دیا جائے گا ، ٹرمپ نے ٹویٹ کرتے ہوئے کہا کہ ایران سلیمانی کے قتل کا انتقام لینے کے لیے امریکہ کے خلاف حملے کی منصوبہ بندی کر سکتا ہے ، امریکہ کے خلاف ایران کے کسی بھی حملے کا مقابلہ ایسے حملے سے کیا جائے گا جس کی شدت ایک ہزار گنا زیادہ ہو گی، ٹرمپ نے ایرانی جنرل قاسم سلیمانی پر امریکی قاتلانہ حملے کا ایک بار پھر دفاع کرتے ہوئے پرانا بیان دہرا دیا کہ وہ امریکی فوج پر حملے کی منصوبہ بندی کر رہے تھے ۔ دریں اثنا ٹرمپ نے ایک مارننگ شو ''فاکس اینڈ فرینڈز'' میں گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ وہ 2017 میں شامی صدر بشار الاسد کو قتل کرانا چاہتے تھے ، لیکن اس وقت کے وزیر دفاع جم میٹس نے آپریشن کی مخالفت کردی، میٹس ایسا نہیں چاہتے تھے اور میں نے اسے جانے دیا۔ واضح رہے 2018 میں واشنگٹن پوسٹ کے صحافی باب ووڈ وارڈ نے اپنی کتاب '' خوف: ٹرمپ وائٹ ہاؤس میں'' میں اسی بات کا انکشاف کیا تو ٹرمپ نے اس وقت اس کی نفی کردی تھی۔ بشار الاسد کو قتل کرنے کا منصوبہ اس وقت بنایا گیا تھا جب اپریل 2017 میں بشار الاسد نے شام میں عام شہریوں پر کیمیائی حملہ کیا تھا، ووڈ ورڈز نے اپنی کتاب میں لکھا کہ اس واقعہ کے بعد امریکی صدر ٹرمپ نے کہا فورسز کو کہا جاؤ اور اسد کو قتل کردو۔