لاہور(رپورٹ:عثمان علی)بچوں پرتشدد کے کیسز رپورٹ کروانے کا مثبت رجحان بڑھنے لگا،رواں سال اب تک 30سے زائد گھریلو تشدد کے شکار بچوں کو چائلڈپروٹیکشن بیورو نے ریسکیو کیا ۔بچوں پر تشد د کے حوالے سے بچوں کو انصاف دلانے اور ان پرہونے والے مظالم کے خلاف شہریوں میں آگاہی اور کیسز کو رپورٹ کرنے کے رجحان میں مثبت اضافہ دیکھنے میں آیا ہے اور اب شہری اپنے ارد گرد ہونے والے اس طرح کے واقعات کو رپورٹ کرتے ہیں اور یہ واقعات نہ صرف سوشل میڈیا بلکہ متعلقہ فورم پر بھی رپورٹ کئے جار ہے ہیں ۔ چائلڈ پروٹیکشن بیور و میں رواں سال اب تک 30سے زائد کیسز رجسٹرڈ ہوئے ہیں جن میں ابتدائی معلومات جنرل پبلک کی جانب سے ہی مہیا کی گئی ہیں ۔اس حوالے سے یہ بھی معلومات بھی سامنے آئی ہیں کہ تشد د کاشکار زیادہ تر بچے گھروں میں ملازمت کرنے والے بچے ہوتے ہیں ۔چائلڈ پروٹیکشن بیور و میں رجسٹرڈ ہونے والے کیسز میں معلومات ہمسائیوں، گھروں میں مزدوری یا الیکٹرک کام یا کسی اور غرض سے آنے والے افراد نے دیں ۔اس حوالے سے بیورو حکام کا کہنا ہے کہ بچوں پر تشدد بالخصوص گھریلو تشدد کاشکار بچوں کے کسیز رپورٹ ہونے میں اضافہ ہوا ہے ایک ہفتہ میں 4کیسز بھی رپورٹ ہوئے ۔