سجاول(نامہ نگار)بھارتی فورسز پاکستان کی سمندری حدود کی خلاف ورزی کرتے ہوئے سرکریک میں مچھلی کے شکار میں مگن 5ماہی گیروں یوسف، خدا ڈنو ،اسلم، رانو اور منظور کو گرفتار کرکے کشتی سمیت بھارت لے گئیں، ماہی گیروں نے اپنے پیاروں کی رہائی کیلئے حکام بالا سے اپیل کردی۔ ذرائع کے مطابق ماہی گیروں کا تعلق تحصیل جاتی کے علاقہ کلکہ چھانی کے گوٹھ عیسو بوڑہیو سے ہے ، دوسری جانب انصار برنی ٹرسٹ کے سربراہ انصار برنی نے 5 ماہی گیروں کی گرفتاری کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا کہ بھارتی اہلکاروں کی جانب سے پاک سمندری حدود کی خلاف ورزی کرکے بے گناہ ماہی گیروں کو گرفتار اور انہیں برسوں تک قید کرنا ظلم و زیادتی اور انسانی حقوق کی پامالی ہے ۔ انہوں نے حکومت سے اپیل کی کہ بھارتی اہلکاروں کی کھلی دہشتگردی کا نوٹس لیکر بے گناہ پاکستانی ماہی گیروں کو رہا کرایا جائے ۔