مکرمی ! کم و بیش ساڑھے تین عشرے ہونے کو ہیں اور کشمیر میں کرفیو نافذ ہے۔ اسکول، کالجز، دکانیں، نظام مواصلات، بینک، مساجد و سفری بندش کا عالم ہے۔ یقینا" گھروں میں خوراک و بچوں کے لیے دودھ کی قلت ہوگی۔ ادھر مسلسل ایل اوسی کی خلاف ورزی بھارت کا وطیرہ بن چکا ہے۔ 2017 سے اب تک بھارت کم و بیش 1970 مرتبہ ایل۔او۔سی کی خلاف ورزی کرچکا ہے۔ پھر وہی ستمبر کا مہینہ ہے وہی مسئلہ ہے۔ اسی طرح قوم و افواج پاک میں جذبہ ایمانی ہے۔ 27 فروری کو پاک ایئرفورس نے بھارتی طیارے تباہ کر کے ایک بار پھر ایم ایم عالم کی یاد تازہ کر دی اور دشمن کو بتا دیا کہ پاک فوج و ایئرفورس کے جوان آج بھی ہر محاذ پر لڑنے کے لیے تیار ہیں۔ (حسان بن ساجد )