لاہور(سٹاف رپورٹر) مسلم لیگ (ن) کے صدر اورقائد حزب اختلاف شہباز شریف نے کہا ہے جیل، ہتھکڑی، گرفتاری اور گالی ہمیںناکام نیازی کے جھوٹ بے نقاب کرنے سے نہیں روک سکتی ،اپوزیشن ملک و قوم کے مفادات کیلئے ہر قربانی دینے کو تیار ہے ،جوہری پروگرام سمیت قومی مفاد کے کسی معاملے میں سودے بازی نہیں ہونے دیں گے ۔شہباز شریف کی زیر صدارت ن لیگ کااہم مشاورتی اجلاس ماڈل ٹاؤن سیکرٹریٹ میں منعقدہوا جس میں احسن اقبال ، ایاز صادق ،رانا تنویر،خرم دستگیر،عطا اﷲ تارڑ سمیت دیگر عہدیداران نے شرکت کی۔اجلاس میں مسئلہ کشمیر پر حکومتی پالیسی ،لیگی رہنمائوں کی گرفتاریوں ، سیاسی اور معاشی صورتحال پر تفصیلی تبادلہ خیال کیا گیا۔اجلاس سے خطاب میں شہباز شریف نے کہامسلم لیگ (ن) کسی خوف اور فکر کے بغیر کسانوں ، صنعتکار وں، اور غریبوں کی آواز بنے گی،عوامی رابطہ مہم مزید تیزہوگی، ورکرز کنونشن منعقد ہونگے ۔مہنگائی، بے روزگاری، بجلی گیس کی قیمتوں میں ہوشربا اضافے نے عوام سے جینے کا حق چھین لیا ہے ۔تاجروں، صنعتکاروں، دکانداروں اور مزدور کے حقوق کی جنگ پوری قوت سے لڑیں گے ،یوم آزادی یوم یکجہتی کشمیر کے طور پر بھرپور انداز سے منایا جائے گا، 14 اگست کو لاہور میں پرچم کشائی کریں گے ۔ انہوں نے کہاحکومت کشمیر، معیشت سمیت قومی اور عوامی معاملات پر اپنی تاریخی ناکامیوں کو اپوزیشن کی گرفتاریوں سے چھپانا چاہتی ہے ،گیارہ ماہ میں تاریخ کا سب سے زیادہ 31.8 کھرب کا قرض ناکام حکومت کا معاشی جرم ہے ،آئی ایم ایف اور ٹیکس وصولیوں کے اہداف میں مکمل ناکامی سے قومی مفادات کو سنگین خطرات لاحق ہیں۔مسلم لیگ (ن) کردارکشی اور انتقام کے ہتھکنڈے پہلے بھی بھگت چکی ہے ،عوام نے ہمیشہ مسلم لیگ (ن) اور اس کی قیادت کے خلاف زہریلے پروپیگنڈے کو مسترد کیا اور ہم پر ہمیشہ اعتماد کیا۔اجلاس کے بعد شہباز شریف لیگی رہنما عظمی بخاری کے گھر گئے اور انکی عیادت کی۔اس موقع پر انہوں نے کہا عظمی بخاری سے پولیس کی بدسلوکی قابل مذمت،شرمناک اور افسوسناک اور فسطائی ذہنیت کا ثبوت ہے ،کارکن ہمارے سر کا تاج اور پارٹی کا قیمتی اثاثہ ہیں،عمران خان کی حکومت میں سیاسی ورکرزخواتین پر تشدد کیاجارہا ہے ،عظمی بخاری کو ابھی تک میڈیکل رپورٹ نہیں دی جارہی جبکہ بدتمیزی کرنے والے پولیس اہلکار کے خلاف کاروائی نہیں کی گئی،مسلم لیگ ن اس اہلکار کے خلاف قانونی چارہ جوئی کرے گی۔