راولپنڈی؍ ایبٹ آباد(نامہ نگار خصوصی؍مانیٹرنگ ڈیسک) حسن ابدال کے قریب پشاور موٹر وے پر براہمہ باہتر کے قریب بس الٹنے سے 13، کوہستان میں جیپ کھائی میں گرنے سے 8افراد جاں بحق ہوگئے ۔ تفصیلات کے مطابق بس سوات سے لاہور جا رہی تھی کہ بارش کے باعث ایم ون براہمہ باہتر انٹرچینج کے قریب ڈرائیور قابو نہ رکھ سکا اور بس الٹ گئی جس سے ایک بچے اور 3 خواتین سمیت 13 افراد جاں بحق اور 46 زخمی ہوگئے ۔ ریسکیو1122کی طرف سے فراہم کردہ معلومات کے مطابق جاں بحق ہونیوالوں میں سکینہ بی بی،نورین ،کنزا ،خالد شہزاد،سیف الرحمٰن ،نیاز ،تاج ، اعجاز شامل ہیں،2 افراد کی شناخت نہ ہو سکی۔معمولی زخمی بس ڈرائیور کو پولیس نے تحویل میں لیکر تھانہ حسن ابدال منتقل کردیا ہے ۔ڈی آئی جی موٹرویز اشفاق احمد نے متعدد عینی شاہدین کا حوالہ دیتے ہوئے بتایا کہ حادثہ بس ڈرائیور کی غفلت سے پیش آیا، ڈرائیور بس چلاتے ہوئے مسلسل موبائل فون کا استعمال کر رہا تھا جبکہ چند مسافروں کی جانب سے منع کرنے پر بھی وہ باز نہیں آیا ۔انہوں نے کہا جاں بحق افراد کا تعلق لاہور، ننکانہ صاحب اور سوات سے ہے ۔اپرکوہستان کے علاقے کمیلا کے قریب جیپ دریائے سندھ میں گری۔ریسکیوحکام کے مطابق حادثے میں 8افرادجاں بحق اور4زخمی ہوئے ۔جیپ میں سوارافرادداسوجارہے تھے ۔چیئرمین سینٹ صادق سنجرانی، قائم مقام گورنر پنجاب چودھری پرویزالٰہی و دیگر نے حادثے پر افسوس کا اظہار کیا ہے ۔