لاہور(اشرف مجید)حکومتی بجٹ کیخلاف آج ملک بھر کی تاجر تنظیموں کی جانب سے ہڑتال کی کال کے کامیاب ہونے کے امکانات زیادہ ہیں جبکہ حکومتی نمائندوں کی جانب سے تاجروں کو صرف تسلیاں دے کر انہیں اپنے ساتھ ملانے کی کوششیں بھی موثر ثابت نہیں ہو سکی ہیں ،آج لاہور سمیت ملک بھر کی بڑی مارکیٹوں میں مکمل شٹر ڈاون جبکہ چھوٹی و پرچون مارکیٹوں میں جزوی ہڑتال ہو گی ۔ذرائع کے مطابق حکومتی حمایتی تاجر تنظیم پاکستان ٹریڈرز الائنس کو یقین دہا نیوں کے باوجود،رات گئے تک وفاقی وزیر کی جانب سے ٹیکسوں اور شرائط میں نرمی بارے اعلان نہ ہونے پر ان کے اپنے اندر دھڑے بندی ہو گئی الائنس کے مرکزی صدر میاں محمد علی نے حکومت کے ساتھ بیٹھنے سے انکار کر دیا جس پر انہیں ٹریڈرز الائنس کی صدارت سے ہٹا دیا گیا ۔آج اعظم کلاتھ مارکیٹ ،پاکستان کلاتھ مارکیٹ ،شاہ عالم مارکیٹ ،اندرون مارکیٹ ،شو مارکیٹ ،مال روڈ ،ہال روڈ ،برانڈرتھ روڈ ،رحمان گلیاں ،سرکلر روڈ ،بل روڈ ،لوہا مارکیٹ ،منٹگمری روڈ ،آٹو مارکیٹ میکلورڈ روڈ اور کار ڈیلر ز سمیت بڑی تمام مارکٹیں مکمل طور پر بند رہیں گی ۔ادویات فروخت کرنے والی مارکٹیں کھلی رکھی جائیں گی جبکہ برکت مارکیٹ ،لاہور کینٹ ،فورٹریس سٹیڈیم ،ڈیفنس ،باغبانپورہ ،گڑھی شاہو ،نسبت روڈ ،ایبٹ روڈ ،اسلام پورہ ،سنت نگر ،گلبرگ ایریا ،گلشن راوی ،چوک یتیم خانہ ،سبزہ زار ،ملتان روڈ ،ماڈل ٹائون ،ٹائون شپ ، علامہ اقبال ٹائون ،فیصل ٹائون ،جوہر ٹائون ،واپڈاٹائون ،رائے ونڈ میں جزوی ہڑتال ہوگی۔