لاہور(جنرل رپورٹر)گرینڈ ہیلتھ الائنس کے چیئرمین سلمان حسیب نے کہا کہ یہاں کے ہسپتالوں کا تمام عملہ کے پی کے کے ڈاکٹرز کے ساتھ کھڑاہے ۔ شیخ زاید ہسپتال میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے چیئرمین سلمان حسیب نے کہا کہ خیبر پختونخوا میں ہونے والا واقعہ ریاستی دہشت گردی کی بد ترین مثال ہے ۔خیبرپختونخوا میں حکومت نے ہسپتالوں کی نجکاری کر کے خود کو بری الزمہ کر لیا۔ہمارا آئین احتجاج کی اجازت دیتا ہے یہ احتجاج بھی ہیں کرنے نہیں دے رہے ۔ انہوں نے الزام عائد کیا کہ کے پی کے کہ وزیر صحت ڈاکٹر ہشام خان غنڈہ منسٹر ہیں۔ ڈاکٹر ضیا الدین پر حملہ کرنا بدترین سول ڈیکٹیٹرشپ ہے ۔ صوبائی وزیر ہشام خان کو اگر عہدے سے نہیں ہٹایا تو پنجاب میں کے پی کے کی طرز پر احتجاج کریں گے پنجاب میں حکومت کو تین دن کا وقت دیتے ہیں ، حکومت نے مثبت ڈائیلاگ نہ کیا تو جو کے پی کے کے ڈاکٹرز وہاں کریں گے ہم وہی یہاں کر یں گے ۔ ترجمان ڈاکٹر عمر شفیق نے کہا کہ وزیر اعظم عمران خان کہتے ہیں کہ پنجاب کے ہسپتالوں میں شوکت خانم ہسپتال کا نظام لانا چاہتے ہیں لیکن عوام کو بتائیں کہ وہاں علاج کیسے کیا جاتا ہے ۔ اس سے پہلے بجٹ کیسے خرچ ہوتا ہے ، وہاں لوگوں کو مفت علاج دیا جاتا ہے یا نہیں ۔ صدر قاسم اعوان نے کہا کہ پنجاب کے ینگ ڈاکٹرز کسی وزیر کو پروٹوکول نہیں دیں گے ۔پورے پنجاب میں کالی پٹیاں باندھ کر احتجاج کریں گے۔