مکرمی ! ایک طرف حکمران اوررئیس طبقے کے لیے بنیادی انسانی حقوق کی دوہائی دی جاتی ہے دوسری جانب زندگی میں بہترسہولیات کی خواہش لئے رات دن محنت مزدوری کرنے والے عام عوام کی مجبوری کایہ عالم ہے کہ جن کے بچے دودھ مانگتے ہیں وہ نہیں دے سکتے اوربچے پھربھی رو رو کروالدین سے دودھ مانگتے ہیں،بچوں کوبھوک متاثرکررہی ہے جس کے باعث بچے اپوزیشن یاحکومت کے کسی بیانیے سے متاثرنہیں ہوسکتے، بچوںکوبھوک مٹانے اورزندہ رہنے کیلئے دودھ، روٹی کی ضرورت ہے وہ نہیں جانتے اورجاننا بھی نہیںچاہتے کہ ملک میں کب سرمایہ کاری بڑھے گی یاکب وزیراعظم استعفٰی دیں گے، میری وزیر اعظم سے گزارش ہے کہ وہ ملک میں غریب آدمی کی زندگی میں آسانیاں پیدا کرنے کے لیے اقدامات کریں تاکہ غریب امیر کے لیے ایک پاکستان کا تحریک پاکستان کا وعدہ وفا ہو سکے ۔ (امتیازعلی شاکر)