کیٹو(نیٹ نیوز)ایکواڈور کے صدر لینن مورینو نے مہنگائی کیخلاف مظاہروں کے بعد شدید بدامنی کے واقعات کے باعث رات کا کرفیو نافذ کر دیا ہے جس کا اطلاق اہم سرکاری اور عوامی عمارتوں اور ان کے گرد و نواح پر ہو گا۔ اس صدارتی فیصلے سے قبل کِیٹو میں پارلیمان کے سامنے حکومت مخالف مظاہرین اور پولیس کے مابین ایک بار پھر شدید جھڑپیں ہوئی تھیں۔ اس دوران مظاہرین کچھ دیر کیلئے قومی پارلیمان کی عمارت میں بھی گھس گئے تھے ، جو اس وقت خالی تھی۔ اس جنوبی امریکی ملک میں گزشتہ کئی دنوں سے ایندھن کی قیمتوں میں اضافے کے خلاف احتجاج جاری ہے۔