پیرس ،نئی دہلی(نیوزایجنسیاں،نیٹ نیوز )فرانسیسی اخبار نے دعویٰ کیا ہے کہ فرانس کی حکومت نے بھارت کو رافیل لڑاکا طیاروں کی فروخت سے متعلق ڈیل کے سلسلہ میں بھارتی ارب پتی شخصیت انیل امبانی کی کمپنی کو143.7 ملین یورو کی ٹیکس چھوٹ دی تھی۔فرانسیسی اخبار کے مطابق بھارتی کمپنی ریلائنس کو ٹیکس میں یہ چھوٹ 2015 ئمیں دی گئی تھی۔ فرانس نے رافیل طیاروں کی خریداری کا معاہدہ منظور ہوتے ہی ٹیکس چوری میں ملوث بھارتی تاجر کو ریلیف فراہم کیا۔ فرانس کی حکومت نے مودی کی وجہ سے بھارتی تاجر انیل امبانی کو ٹیکس میں چھوڑ دی، اسکی کمپنی ٹیکس چوری میں ملوث تھی مگر ڈیل ہوتے ہی اسے معاف کردیا گیا۔ ادھر ریلائنس نے فرانسیسی اخبار کی رپورٹ کو من گھڑت قرار دیا ہے جبکہ اس حوالے سے مودی حکومت نے بھی تردیدی بیان جاری کیا ہے ۔علاوہ ازیں نئی دہلی میں فرانسیسی سفارت خانے کے مطابق ریلائنس کے ساتھ ٹیکس کے حوالے سے طے پانے والا معاملہ قانون کے دائرے میں اور سیاسی اثر و رسوخ کے بغیر تھا۔یاد رہے کہ 7 مارچ کو بھارت کی دوسری بڑی سیاسی اور اپوزیشن میں رہنے والی جماعت کانگریس کے صدر راہول گاندھی نے دعویٰ کیا تھا کہ رافیل ڈیل میں براہ راست مودی ملوث ہیں کیونکہ انہوں نے 30 ہزار کروڑ روپے امبانی کی جیب میں ڈالے ۔