لاہور (فورم رپورٹ : رانا محمد عظیم ، محمد فاروق جوہری ) آل پاکستان38ویں سالانہ ختم نبوت کانفرنس مسلم کالونی چناب نگر ضلع چنیوٹ کے انتظامات مکمل ہو چکے ہیں،کانفرنس میں تمام مکاتب فکر کے ممتاز علماء کرام، مذہبی و دینی قیادت، مبلغین ختم نبوت، اور متعدد روحانی و سیاسی شخصیات شرکت کریں گی،کانفرنس کی تمام تر آڈیو کارروائی سوشل میڈیا اورر انٹرنیٹ پر نشر کی جائے گی، کانفرنس ختم نبوت ؐکے فروغ کیلئے معاون ثابت ہو گی ۔ان خیالا ت کا اظہار عالمی مجلس ختم نبوت کے عہد یداران نے روزنامہ 92نیوز فورم سے گفتگو کرتے ہوئے کیا ۔عالمی مجلس تحفظ ختم نبوت کے مرکزی ناظم نشرواشاعت مولانا عزیز الرحمٰن ثانی نے کہا کہ کانفرنس کے انتظامات مکمل ہو چکے ہیں، ہزاروں افراد شرکت کریں گے ، کانفرنس میں تمام مکاتب فکر کے ممتاز علماء کرام، مذہبی و دینی قیادت، مبلغین ختم نبوتؐ اور متعدد روحانی و سیاسی شخصیات شرکت کریں گی۔عالمی مجلس تحفظ ختم نبوت ضلع لاہور کے مبلغ مولانا عبدالنعیم نے کہا ہے کہ کانفرنس امت مسلمہ کے قلوب و اذہان میں عشق رسالتؐ کے چراغ روشن کرے گی، ناموس رسالتؐ اور عقیدہ ختم نبوتؐ کے فروغ کی جدو جہد کیلئے سنگ میل اور فتنوں کی ارتدادی سرگرمیوں کے تدارک کیلئے مشعل راہ ثابت ہوگی۔ مقررین توحید باری تعالیٰ، عقیدہ ختم نبوت ؐکی اہمیت و فضیلت، حیات و نزول عیسیٰ علیہ السلام، ظہور امام مہدی علیہ الرضوان، عظمت صحابہؓ و اہل بیتؓ، استحکام پاکستان، اتحاد امت مسلمہ کی موجودہ صورت حال کے موضوعات پر خطابات کریں گے ۔ ضلع لاہور کے سیکرٹری جنرل مولانا علیم الدین شاکر نے کہا کہ مبلغین ختم نبوت نے مختلف شہروں میں اشتہارات، پینا فلیکس اور دعوت ناموں کے ذریعے مسلمانوں کو اس عظیم الشان کانفرنس میں شرکت کی دعوت دی، ملک بھر سے حسب سابق ہزاروں افراد شرکت کرینگے ۔مولانا جمیل الرحمٰن اختر نے کہا کہ کانفرنس میں ناموس رسالتؐ اور عقیدہ ختم نبوتؐ کے تحفظ کے لئے تجدید عہد کا اعلان کیا جائے گا،ختم نبوتؐ پر یقین ہمارے دین اور ایمان کا حصہ ہے جب تک ہمارا یقین ختم نبوت ؐپر نہیں ہو گا ہمارا ایمان اور دین نا مکمل ہے ۔ پیرمیاں رضوان نفیس نے کہا کہ کانفرنس میں تحفظ ناموس رسالتؐ اور ختم نبوت ؐکے قوانین کے خاتمہ کے متعلق ان کی ریشہ دوانیوں کے انسداد کیلئے لائحہ عمل پیش کیا جائے گا، ختم نبوتؐ قانون میں کسی قسم کی تبدیلی یا ترمیم کسی صورت بھی ہمیں منظور نہیں ۔