لاہور( حافظ فیض احمد) پرائیویٹ سیکٹر کے تحت چلنے والی ہزارہ ایکسپریس ٹرین کا کنٹریکٹ ختم ہو گیا جبکہ دوسری ٹرین فرید ایکسپریس کے کنٹریکٹ کی مدت بھی20اگست کو ختم ہو جائے گی، ریلوے حکام نے دونوں ٹرینوں کی بکنگ کا نظام سنبھال لیا ، دونوں ٹرینیں ایک نجی کمپنی کو ایک سال کے کنٹریکٹ پر دی تھیں، ریلوے کو سالانہ2ارب روپے کی آمدن ہوتی تھی ،ریلوے حکام نے دونوں ٹرینوں کا کنٹریکٹ ختم کرنے کا نوٹیفکیشن جاری کر دیا، ایک ٹرین ہزارہ ایکسپریس کا گزشتہ روز معاہدہ مکمل ہونے پر ریلوے نے کنٹرول سنبھال لیا جبکہ دوسری ٹرین کا کنٹریکٹ20 اگست کو مکمل ہو گا۔