کراچی(کامرس رپورٹر) ملکی مجموعی زرمبادلہ کے ذخائرمیں گراوٹ کا سلسلہ برقرار ،ایک ہفتے میں زرمبادلہ کے ذخائر مزید29کروڑ98لاکھ ڈالر کی کمی سے 16 ارب 6کروڑ99لاکھ ڈالر کی سطح پر آگئے جس میں مرکزی بینک کے ذخائرمیں26کروڑ7لاکھ ڈالر کی کمی ریکارڈ کی گئی جب کہ دیگر کمرشل بینکوں کے ذخائر میں3کروڑ91لاکھ ڈالرکی کمی ہوئی ۔ اسٹیٹ بینک آف پاکستان کے جمعرات کو جاری اعداد وشمار کے مطابق 7ستمبرکو ختم ہونے والے ہفتے کے دوران زرمبادلہ کے مجموعی ذخائرمیں29کروڑ98لاکھ ڈالرکی کمی ریکارڈ کی گئی جس کے نتیجے میں ملکی مجموعی زرمبادلہ کے ذخائر 16 ارب36کروڑ97لاکھ ڈالرسے گھٹ کر 16 ارب 6 کروڑ 99لاکھ ڈالرہوگئے جس میں اسٹیٹ بینک کے پاس موجود ذخائر کی مالیت میں26کروڑ7لاکھ ڈالرکی کمی ہوئی جس سے مرکزی بینک کے ذخائر9ارب88کروڑ51لاکھ ڈالرسے گھٹ کر9ارب62کروڑ44لاکھ ڈالر رہ گئے جب کہ دیگر کمرشل بینکوں کے ذخائر میں3کروڑ91لاکھ ڈالرکی کمی ریکارڈ کی گئی جس سے کمرشل بینکوں کے ذخائر 6ارب 48 کروڑ 46لاکھ روپے سے گھٹ کر6ارب44کروڑ55ڈالر ہوگئے ۔ اسٹیٹ بینک کے مطابق بیرونی قرض ودیگر ادائیگیوں کے باعث زرمبادلہ کے ذخائر میں کمی آئی ہے ۔