ہرارے ( سپورٹس ڈیسک) دوسرے ٹیسٹ کے تیسرے روز پاکستان کے خلاف 132 رنز پر آؤٹ ہونے کے بعد فالو آن کی زمبابوے کی بیٹنگ لائن ایک بار پھر شاہینوں کا سامنا نہیں کرسکی اور 220 رنز پر 9 کھلاڑی پویلین لوٹ گئے ۔ پاکستان کے 510 کے جواب میں 132 کے مجموعی سکور پر ڈھیر ہونے والی زمبابوے کی ٹیم کو فالو آن کا سامنا ہے جس میں پاکستانی باؤلر نعمان علی کی شاندار 5 اور شاہین آفریدی کی 4 وکٹوں ہیں۔ ابھی زمبابوے کو 158 رنز کے خسارے کا سامنا ہے جب کہ پاکستان ایک اننگ سے فتح کے لیے محض 1 وکٹوں کی دوری پر ہے ۔تیسرے دن کے کھیل کا آغاز ہوا تو میزبان ٹیم نے اپنی پہلی اننگز کا آغاز 4 وکٹ 52 رنز سے کیا۔کھیل کے ابتداء میں ہی اس کو 3 وکٹوں کا نقصان اٹھانا پڑگیا، اس کی پانچویں وکٹ 53 رنز پر گر ی جب چوسورو ایک رن بنا کر حسن علی کی گیند پر آؤٹ ہوئے ، اس کے فوراً بعد ہی چھٹی وکٹ 68 رنز پر گر گئی جب چکابووا 66 رنز بنا کر پویلین چلتے بنے ۔میزبان ٹیم کے ساتویں آؤٹ ہونے والے کھلاڑی لوک جانگوی تھے وہ 19 رنز بنا سکے ، آٹھویں وکٹ 108 اور نویں 110 کے مجموعی سکور پر گری ۔ میزبان ٹیم اپنی پہلی اننگز میں 132 رنز ہی بنا سکی ۔حسن علی نے کیرئر کی بہترین بولنگ کرتے ہوئے 27 رنز کے عوض پانچ شکار کیے ، ساجد خان نے 2، تابش خان اور شاہین شاہ آفریدی نے ایک ایک وکٹ حاصل کی۔ دوسری اننگز میں بھی زمبابوے کے کھلاڑی پاکستانی بائولر کا سامنا نہ کر سکے اور تو چل میں آیا کی پالیسی پر پویلین لوٹتے رہے ۔ زمبابوے نے دن کے اختتام تک نو وکٹوں کے نقصان پر 220 رنز بنائے ہیں اور اسے 158 رنز کے خسارے کا سامنا ہے ۔ پاکستان کی جانب سے دوسری اننگز میں شاہین شاہ آفریدی نے چار جبکہ نعمان علی نے پانچ کھلاڑیوں کو آئوٹ کیا۔