لاہور (سٹاف رپورٹر)امیر جماعت اسلامی سراج الحق نے کل 13 جولائی کو تاجر تنظیموں کی ملک گیر ہڑتال کی حمایت کا اعلان کرتے ہوئے کہاہے کہ جماعت اسلامی تاجروں کو تنہا نہیں چھوڑے گی ،حکومت آئی ایم ایف کے دباؤ پر تاجروں کو دباؤ میں لانے اور انکے کاروبار ختم کرنے پرتلی ہوئی ہے ۔تنظیم تاجران کے مرکزی صدر کاشف چودھری کے رابطہ کرنے پر سراج الحق نے انہیں ہڑتال کی مکمل حمایت کا یقین دلاتے ہوئے کہاکہ حکومت کے ظالمانہ اقدامات ناقابل برداشت ہوچکے ہیں ، حکمران عوام مہنگائی کی چکی میں پس رہے ہیں اورحکمران ہر روز آئی ایم ایف کے حکم پر نئے نئے ٹیکس متعارف کرا رہے ہیں۔دریں اثنا سراج الحق کی زیر صدارت مرکزی مجلس شوریٰ نے ملک کی زرعی صورتحال کے متعلق قرارداد منظور کی جس میں مطالبہ کیا گیا کہ فوری طور پر ملک میں زرعی ایمر جنسی نافذ کرتے ہوئے کسانوں کی بہتری کیلئے حکمت عملی کا اعلان کیا جائے ۔کھاد،بیج ،زرعی ادویات اورمشینری پر عائد جی ایس ٹی ختم، قیمتوں میں اضافہ واپس لیا جائے ۔ زرعی ٹیوب ویلوں پر بجلی کے ریٹ میں اضافہ واپس لیا جائے ،کپاس ، گندم ، آلو،مکئی وغیرہ کی امدادی قیمتوں کا اعلان کیاجائے ۔ایک اور قرار داد میں کہا گیا پی ٹی آئی نے الیکشن سے پہلے اپنے منشور میں جو وعدے کئے تھے ان کی خلاف وزی کی، احتساب پر اتنا زور دینے اور سابق حکمران خاندانوں کی گرفتاریوں کے باوجود لوٹی دولت کی وصولی میں ناکامی قابل تفتیش امر ہے ۔علاوہ ازیں سراج الحق آج ملتان میں مہنگائی، بیروزگاری کیخلاف عوامی مارچ کی قیادت اور خطاب کرینگے ۔