گوادر(مانیٹرنگ ڈیسک)دنیا کی تیسری بڑی آئل ریفائنری کیلئے پیش قدمی شروع ہوگئی۔سعودی وزیر پٹرولیم وتوانائی خالد بن عبدالعزیزوفدکیساتھ گوادر پہنچ گئے ۔سعودی عرب کے وزیر توانائی خصوصی طیارے کے ذریعے گوادر پہنچے ، وفاقی وزیر پٹرولیم غلام سرور اور وزیر برائے پورٹ اینڈ شپنگ علی زیدی نے استقبال کیا۔چیئرمین جی پی اے نے سعودی وفدکوگوادرپورٹ اورترقیاتی کاموں کے حوالے سے بریفنگ دی۔سعودی وزیرپٹرولیم نے آئل ریفائنری کی سائٹ کا دورہ کیا۔خالد بن عبدالعزیزنے کہاکہ سعودی عرب پاکستان میں تاریخ کی سب سے بڑی سرمایہ کاری کریگا،گوادر پورٹ ایک اہم خطے میں واقع ہے ، گوادر پاکستا ن ، چین اور سعودی عرب کی دوستی کی مثال بنے گا۔وفاقی وزیرپٹرولیم غلام سرور خان نے کہا سعودی عرب کی سی پیک میں شمولیت سے منصوبے کی اہمیت مزیدبڑھ جائیگی،پاکستان میں زراعت کے شعبے میں سرمایہ کاری کے وسیع مواقع موجودہیں،سعودی عرب کو زراعت میں سرمایہ کاری کی دعوت دیتے ہیں،پاکستان اورسعودی عرب گوادرمیں آئل سٹی کے قیام کیلئے اگلے ماہ معاہدے پردستخط کرینگے ۔وزیر پٹرولیم نے بتایا کہ چین کو گوادر میں سعودی عرب کی آمد پر کوئی خدشہ نہیں ہے ، بلوچستان حکومت کو بھی اعتماد میں لیا گیا ہے ۔انہوں نے کہا آئندہ ماہ سعودی ولی عہد محمد بن سلمان کا بھی دورہ گوادر اور ریفائنری کے سمجھوتے پر دستخط متوقع ہے ۔