نیو یارک ( نیٹ نیوز ) اقوام متحدہ کے ماہرین نے شمالی کوریا کے مبینہ سائبر حملوں کی تفتیش شروع کر دی ہے ۔ ایسے حملوں کی کم از کم تعداد 35 ہے اور یہ 17 مختلف ملکوں پر کئے گئے تھے ۔ ایسے خدشات ظاہر کئے گئے ہیں کہ شمالی کوریائی حکومت نے ان حملوں کے ذریعے غیرملکی سرمایہ کمایا ہے اور ان رقوم سے ایسی ہتھیار سازی بھی کی گئی جن کے ذریعے وسیع پیمانے پر تباہی پھیلائی جا سکتی ہے ۔ گزشتہ ہفتے نیوز ایجنسی ایسوسی ایٹڈ پریس کی رپورٹ میں بیان کیا گیا تھا کہ شمالی کوریا نے اپنی انتہائی جدید سائبر سرگرمیوں سے دو بلین ارب امریکی ڈالر حاصل کئے تھے ۔ جن 17 ملکوں پر حملے کئے گئے ان میں کویت، نائجیریا، پولینڈ، جنوبی افریقہ، تیونس اور ویتنام بھی شامل ہیں۔