لاہور (آن لائن) رائیونڈ میں عالمی تبلیغی اجتماع کے دوسرے مرحلے کے دوسرے دن علما کرام نے بیانات کئے ، اجتماع کے شرکاء نے نماز جمعہ مولانا اسماعیل کی امامت میں ادا کی ، معروف مذہبی سکالر مولانا اسماعیل نے اپنا بیان پیش کیا ، نماز عصر کے بعد مولانا فاروق نے ، نماز مغرب کے بعد مولانا احمد لاٹ نے بیانات کئے ، آج ہفتہ کو اجتماع کا تیسرا دن ہے ، کل اتوار کی صبح نماز فجر کے بعد اجتماعی دعا کی جائے گی۔ پنڈال میں گوجرانوالہ، مانسہرہ، ، بہاولپور، کوہاٹ، مردان، صومالیہ، تھائی لینڈ، بنگلہ دیش، نیپال، برما، ایران،کمبوڈیا و دیگر ملکوں سے فرزندان اسلام موجود ہیں، بھارت، بنگلہ دیش ، انڈونیشیا اور دیگر ریاستوں سے مسلمان تزکیہ نفس کے لیے پنڈال میں موجود ہیں، جمعۃ کو نماز فجر کے بعد مولانا عبدالرحمان بیان میں کہا دعوت تبلیغ امر بالمعروف و نہی عن المنکر اسلام میں ریڑھ کی ہڈی کی حیثیت رکھتاہے اس پر اسلام کی کامیابی کا انحصار ہے آج کے دور میں اس کی اشد ضرورت ہے ، معاشرہ کو پاکیزہ بنانے کے لئے اور عوام الناس کی اصلاح کے لئے ان کو دینی علوم سے آراستہ ہونا انتہائی ضروری ہے ، اسلامی علوم اور اسلامی عقائد سے واقف بچے کبھی بھی فکری ارتدار کا شکار نہیں ہوسکتے ، مولانااسماعیل نے اپنے خطاب میں کہا بھٹکنے والوں پر اﷲ تعالیٰ اپنا عذاب مسلط کردیتا ہے پھر تمہاری دعائیں بھی قبول نہیں ہونگی ، دنیا فانی ہے ، آخرت کی زندگی ہمیشہ ہمیشہ کے لیے ہے ، ظالموں کو ظلم سے روکتے رہو اور حق بات کی طرف کھینچ کرلاتے رہو ، ورنہ تمہارے قلوب بھی اسی طرح خلط کردیئے جائیں گے جس طرح ان ظالموں کے کردیئے گئے ہیں ، کلمہ حق کی دعوت کو ہربنی نوع انسان تک پہنچانا اب ہمارے ذمہ ہے ، بنگلہ دیش مولانا فاروق نے اپنے بیان میں کہا ، اﷲ تعالی نے نبی اکرم ﷺ کوصرف کے لئے مسلمانوں رحمت بناکر نہیں بھیجا ، آج پوری دنیا میں جس قدر مسلمان دنیاوی مسائل کا شکار ہیں اسکا اندازہ سب کو بخوبی ہے ، ہمیں اﷲ تعالی سے معافی اور اپنے آپ کو اور بیوی بچوں اور ارد گرد کے لوگوں کو اﷲ تعالی کے احکامات کا پابند بنانے کا بیڑا اٹھانا ہو گا۔