اسلام آباد(لیڈی رپورٹر،آن لائن )اسلام آبادہائیکورٹ نے جعلی اکاؤنٹس کیس میں ملزم عبدالغنی مجید اور جعلی پلاٹس کی فرضی ناموں پر الاٹمنٹ کے جعلی بینک اکائونٹس کیس میں ملزم اعجاز ہارون کی درخواشت ضمانت بعد از گرفتاری منظور کر لی۔ گزشتہ روزاسلام آبادہائیکورٹ کے جسٹس میاں گل حسن اورنگزیب اورجسٹس فیاض احمد انجم جندران پر مشتمل بنچ نے طبی بنیادوں پر اومنی گروپ کے اڈیالہ جیل میں قید عبدالغنی مجید کی درخواست ضمانت منظورکی اور ملزم کو 10 کروڑ روپے کے مچلکے جمع کرانیکا حکم دیا۔عدالت نے اپنے حکم میں کہا کہ عبدالغنی مجید اسلام آباد کے ہسپتال میں زیر علاج رہیں اور ہر پیشی پر عدالت میں پیش ہوں۔علاوہ ازیں جسٹس عامر فاروق اور جسٹس غلام اعظم قمبرانی پر مشتمل بنچ نے سابق ایم ڈی پی آئی اے اعجاز ہارون کی درخواست پر محفوظ فیصلہ سناتے ہوئے 10 لاکھ روپے مالیتی مچلکوں کے عوض ضمانت منظور کرنے کاحکم سنادیا۔ اعجاز ہارون پر الزام ہے کہ بطور چیئرمین اوورسیز کوآپریٹو سوسائٹی اختیارات کا غلط استعمال کیا اور12 فرضی پلاٹس کی جعلی الاٹیز کو غیر قانونی الاٹمنٹ کی۔